The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس سے بچنے کے 5 آسان طریقے

کراچی: کرونا وائرس کی وبا نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور وائرس سے بچاؤ کے لیے ماہرین ویکسین کی تیاری میں مصروف ہیں لیکن انہیں ابھی تک خاطر خواہ کامیابی حاصل نہیں ہوسکی۔

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس سے دنیا پریشان ہیں اور اس کے بچاؤ کے لیے اپنی طرف سے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے، مختلف ممالک میں پھیلاؤ کو روکنے کے لیے لاک ڈاؤن کیا گیا ہے لیکن اشیا خوردونوش کی فراہمی کے لیے دکانیں اور میڈیکل اسٹورز کھلے رکھے گئے ہیں۔

کرونا وائرس شہریوں کو سپر اسٹور میں بھی اپنا شکار بنا سکتا ہے اس سے بچنے کے لیے احتیاطی تدابیر اختیار کرنا ضروری ہے جو مندرجہ ذیل ہیں۔

صبح سویرے خریداری

اگر صارفین اشیاخوردونوش کی خریداری صبح سویرے کرلیں تو اس کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہے کہ سپر اسٹورز میں صبح کے اوقات میں رش نہیں ہوگا اور آپ سکون سے شاپنگ کرکے وائرس سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔

ہینڈ سینیٹائزر کا استعمال

شہری خریداری کرتے وقت ہینڈ سینیٹائزر کا استعمال کریں یا ڈسپوزیبل دستانے پہن کر سپر اسٹورز جائیں کیونکہ کوویڈ 19 پلاسٹک کی سطحوں پر دو یا تین دن تک زندہ رہ سکتا ہے۔

چہرے کو نہ چھوئیں

اسٹور میں خریداری کے دوران بغیر ہاتھ دھوئے اپنے چہرے کو نہ چھوئیں، لہٰذا اگر آپ نے غلطی سے کسی آلودہ سطح کو چھو لیا ہے اور پھر اس غیرمتوقع خارش کی وجہ سے صرف اپنا چہرہ کھرچیں تو آپ پریشانی میں پڑ سکتے ہیں۔

مفت چیزوں سے پرہیز کریں

سپر مارکیٹس میں خریداری کا ایک فائدہ یہ ہے کہ لوگوں کو فری سیمپل کے طور پر مختلف چیزیں کھانے کو دی جاتی ہیں لیکن کرونا وائرس کے دوران یہ مفت چیزیں آپ کو نقصان پہنچاسکتی ہیں کیونکہ کسی بھی پھل یا کھانے کی دوسری چیز کو براہ راست اسٹور کھائیں گے تو کرونا کا خطرہ موجود ہوگا۔

گھر پہنچ کر بیگ باہر رکھ دیں

وبائی امراض کے دوران اسٹورز صفائی ستھرائی کے بارے میں اضافی محتاط رہ رہے ہیں لیکن یہ اب بھی ممکن ہے کہ شاپنگ بیگ بلنگ کاؤنٹرز پر جراثیم اٹھا سکیں، لہٰذا انہیں باہر چھوڑیں اور صرف اپنے سامان گھر میں لائیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں