The news is by your side.

Advertisement

بین الافغان مذاکرات کاآغاز: ‘افغان قیادت کو قیامِ امن کے اس تاریخی موقع سے فائدہ اٹھانا چاہیے’

اسلام آباد: وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کا کہنا ہے کہ بین الافغان مذاکرات کاآغازبہت اہم ہے، افغان قیادت کو قیامِ امن کے اس تاریخی موقع سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق انسٹی ٹیوٹ آف اسٹرٹیجک اسٹڈیز کے زیر اہتمام کانفرنس کا انعقاد کیا گیا، وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ڈاکٹرعبداللہ عبداللہ سےامن عمل پرتفصیلی بات ہوئی، افغانستان میں امن عمل کے آغاز کو اپنی کامیابی سمجھتے ہیں، بین الافغان مذاکرات کاآغازبہت اہم ہے۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ چیئرمین افغان مفاہمتی کونسل کا دورہ بہت اہمیت کاحامل ہے، خطےمیں امن افغانستان میں امن سے مشروط ہے اور عالمی برادری افغانستان میں سیاسی عمل کی حمایت کررہی ہے۔

شاہ محمودقریشی نے کہا کہ افغان قیادت کو قیامِ امن کے اس تاریخی موقع سے فائدہ اٹھانا چاہیے، اس بات کااعتراف ہواکہ افغان مسئلہ مذاکرات سےحل ہوگا، طالبان اور امریکہ کے درمیان امن مزکارات تاریخی اہمیت کے حامل ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ افغانستان میں امن عمل کو عالمی برادری کی مکمل حمایت حاصل ہے لیکن ہمیں امن عمل کو نقصان پہچانے والے عناصر سے خبردار رہنا ہو گا۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ افغانستان میں امن عمل علاقائی ترقی کےلیےناگزیرہے، پاکستان اور افغانستان میں امن ایک دوسرے سے مشروط ہے اور پاکستان افغانستان کی خود مختاری،آزادی ور علاقائی سالمیت کا احترام کرتا ہے۔

شاہ محمودقریشی کا مزید کہنا تھا کہ افغانستان کے مستقبل کا فیصلہ افغان عوام نےکرنا ہے، افغان عوام پر مسئلے کا کوئی حل مسلط نہیں کیا جاسکتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں