The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں کرونا بے قابو، صورت حال تشویشناک، اسپتالوں میں گنجائش ختم

کراچی: شہر قائد میں کرونا وائرس کا مرض تیزی سے پھیلنے کی وجہ سے اسپتالوں میں مریضوں کے لیے گنجائش ختم ہوگئی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق کراچی میں کرونا بے قابو ہوگیا اور تیزی سے نئے کیسز رپورٹ ہونے لگے جس کے بعد  اسپتالوں میں مریضوں کے لیے گنجائش ختم ہوگئی۔

کراچی کے تقریباً تمام ہی بڑے اسپتالوں نے عوام کے لیے اسپتالوں کے باہر بینرز آویزاں کردیے جس پر درج کیا گیا ہے کہ ’ہمارے پاس مزید گنجائش نہیں ہے‘۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق کرونا علاج کے لیے مختص کیے جانے والے نجی اسپتال (انڈس، ڈاؤ) نے بھی مزید مریض لینے سے انکار کردیا جبکہ آغا خان اسپتال نے پہلے ہی عوام سے معذرت کرلی۔

مزید پڑھیں: کرونا وائرس، کراچی میں صورت حال بگڑنے لگی

ڈاؤ یونیورسٹی کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہمارے پاس مریضوں کی گنجائش ختم ہوگئی مگر مریضوں کے کرونا ٹیسٹ کیے جارہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق کرونا کے لیے مختص کے جانے والے تمام ہی اسپتالوں کے وارڈز ، آئی سی یو مریضوں سے بھر چکے جبکہ وینٹی لیٹر بھی نایاب ہوگئے ہیں۔

متاثرہ مریضوں کے لواحقین کا کہنا ہے کہ اسپتال انتظامیہ مریض کو داخل کرنے سے انکار کررہی ہے۔ دوسری جانب اسپتال انتظامیہ کی جانب سے مریضوں کو مطلع کردیا گیا ہے کہ اسپتال کا کووڈ وارڈ مکمل طور پر بھر چکا ہے۔

یاد رہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد کراچی میں کرونا کے کیسز تیزی سے رپورٹ ہوئے جبکہ اموات میں بھی بے تحاشہ اضافہ دیکھا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ میں 1600 بچے کورونا سے متاثر

ڈاکٹرز نے سندھ حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کرونا کی روک تھام کے لیے اپنا کردار ادا کرے اور فوری طور پر لاک ڈاؤن میں سختی کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں