The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس شوگر کے مریضوں کیلئے کتنا خطرناک ہے؟؟

پیرس : فرانسیسی محققین نے انکشاف کیا ہے کہ کورونا وائرس سے ہلاک مریضوں کی سب سے بڑی تعداد ان افراد کی ہے جو شوگر کے مریض تھے۔

ذیابیطس دنیا میں تیزی سے عام ہوتا ہوا ایسا مرض ہے جسے خاموش قاتل کہا جائے تو غلط نہ ہوگا کیونکہ یہ ایک بیماری کئی امراض کا باعث بن سکتی ہے اور حیرت انگیز طور پر ذیابیطس ٹائپ ٹو کے شکار 25 فیصد افراد کو اکثر اس کا شکار ہونے کا علم ہی نہیں ہوتا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی خبر کے مطابق محققین کا کہنا ہے کہ ذیابیطس کے ہر پانچ کورونا مریضوں میں سے ایک مریض موت کے منہ میں گیا ہے۔

تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ ذیابیطس میں مبتلا کورونا مریض کو موت کا زیادہ خطرہ لاحق ہوتا ہے۔

محققین کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کیوں کہ مدافعتی نظام کو نقصان پہنچاتا ہے اور ذیابیطس ٹائپ ون میں بھی امیون سسٹم ہی  لبلبہ کے اُن سیلز کو ختم کردیتا ہے جو انسولین بناتے ہیں اور انسولین نہ بننے کی وجہ سے شوگر ہضم ہونے کے بجائے جسم میں ہی موجود رہتی ہے۔

ماہرین صحت نے ہدایت کی ہے کہ گھر سے نکلتے وقت سماجی فاصلہ قائم رکھیں، مصافحہ نہ کریں۔ اجتماعات سے دور رہیں، سامان کو غیر ضروری نہ چھوئیں، ماسک کا استعمال لازمی کریں، دستانے پہنیں اور ہاتھوں کو اچھی طرح سے جراثیم سے پاک کرتے رہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں