The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: سعودی عرب میں ورک ویزے سے متعلق ابہام دور

ریاض: کروناوائرس کے تناظر میں سعودی عرب میں ورک ویزے سے متعلق درجنوں غیرملکیوں کا ابہام دور کردیا گیا۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق کروناوائرس کے پیش نظر سعودی حکومت مختلف اہم اقدامات کررہی ہے جس میں اقامہ رکھنے والوں کی وطن واپسی سمیت ویزا پالیسی بھی شامل ہے۔

اسی ضمن میں کئی غیرملکیوں کو ابہام تھا کہ انہیں کروناوائرس کے پیش نظر نیا ورک ویزا مل سکے گا یا نہیں؟

مقامی عرب میڈیا کی رپورٹ میں یہ ابہام دور کردیا گیا۔ متعدد افراد نے سوال اٹھا تھا کہ سعودی عرب کے لیے نیا ورک ویزہ اپلائی ہو سکتا ہے یا نہیں؟

عرب میڈیا نے اپنی رپورٹ میں جواب دیتے ہوئے کہا کہ کرونا وائرس کے حوالے سے موجودہ صورتحال میں سعودی حکومت نے تمام ویزوں پر عارضی پابندی عائد کی ہوئی ہے اس حوالے سے پالیسی وہی ہے یعنی جب تک وائرس کےحوالے سے حالات بہترنہیں ہو جاتے اس وقت تک عارضی طورپر کوئی نیا ویزہ جاری نہیں ہوگا۔

کرونا وائرس: سعودی عرب کا ہدایات پر عمل نہ کرنے والوں کیلئے سخت اعلان

یاد رہے سعودی حکومت نے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لئے سعودی عرب نے 72گھنٹے بعد غیر معینہ مدت تک داخلہ ویزہ بند کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے پاکستان سمیت12 ممالک کے اقامہ ہولڈرز کو تین دن کے اندر اندر سعودی عرب آنے کی ہدایت کی تھی۔

سعودی خبرایجنسی کے مطابق سعودی عرب نے ان ممالک کے لیے سعودی شہریوں اور مقیم غیر ملکیوں کا سفر اور فلائٹس بھی معطل کردیں ، ان میں پاکستان، بھارت ، یورپی یونین کے کئی ممالک اور سوئٹزرلینڈ کے علاوہ سری لنکا، فلپائن، ایتھوپیا، سوڈان، اریٹریا، کینیا، جبوتی، سوڈان اور صومالیہ شامل ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں