The news is by your side.

Advertisement

کرونا ویکسین: کوویڈ 19 سے صحتیاب افراد کے لیے اچھی خبر

ماہرین کا کہنا ہے کہ وہ افراد جو کوویڈ 19 کا شکار ہو کر اس سے صحت یاب ہوگئے انہیں اب کرونا ویکسین کی صرف ایک خوراک کافی ہوگی۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق کرونا وائرس کی ویکسین کے اثرات کے حال ہی میں مختلف تحقیقی مطالعات سامنے آئے ہیں۔ ان کے نتائج کے مطابق کووِڈ 19 کے مرض کا شکار افراد میں صحت یاب ہونے کے بعد قوت مدافعت بہتر ہو جاتی ہے اور انہیں ایم آر این اے ویکسین کی صرف ایک خوراک کی ضرورت ہوگی۔

ان کے مقابلے میں عام تندرست افراد کو ویکسین کی دونوں خوراکیں ہی لگانی ہوں گی۔

گزشتہ سال دسمبر میں کرونا وائرس کی ویکسین جب تیار ہو کر مارکیٹ میں پہنچی تھیں تو اس کے ساتھ ساتھ ان کے اثرات اور نتائج کا جائزہ لینے کے لیے تحقیقی مطالعات بھی شروع ہو گئے تھے۔

لاس اینجلس میں سیڈارس سینائی میڈیکل سینٹر کے عملے کے ایک ہزار سے زیادہ ارکان نے رضا کارانہ طور پر ایک مطالعے میں حصہ لیا، اس میں انہیں ویکسین لگانے کے بعد ان کے مدافعتی نظام کا جائزہ لیا گیا۔

اس تحقیقی مطالعے کی انچارج سوسن چینگ کا کہنا ہے کہ ڈیٹا میں ایک واضح رجحان ملاحظہ کیا گیا ہے اور وہ یہ کہ جو لوگ کووِڈ 19 کا شکار ہونے کے بعد صحت یاب ہوگئے تھے، ان میں ویکسین کا پہلا ٹیکا لگوانے کے بعد بہتر رد عمل ظاہر ہوا ہے۔ اس کے مقابلے میں جو لوگ اب تک کووِڈ 19 کا شکار نہیں ہوئے اور انہوں نے دونوں خوراکیں لگوائی ہیں، ان میں کم قوت مدافعت پیدا ہوئی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ اس تحقیق کا پیغام بڑا واضح ہے اور وہ یہ کہ اگر آپ کووڈ 19 سے صحت یاب ہو گئے ہیں تو آپ کو کرونا کی کسی ایک ویکسین کی صرف ایک خوراک لگانے کی ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ جانسن اینڈ جانسن اور ایسٹرا زینیکا کی ویکسینز کے ضمنی اثرات سامنے آنے کے بعد کووِڈ 19 کا شکار ہونے والے افراد کو صرف ایک خوراک لگانے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں