The news is by your side.

Advertisement

عدالت نے کراچی سرکلر ریلوے 9 ماہ میں مکمل کرنے کا حکم دے دیا

کراچی: کراچی سرکلر ریلوے سے متعلق سپریم کورٹ نے حکم جاری کر دیا ہے کہ اسے 9 ماہ میں مکمل کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں لارجر بینچ نے 2 روز میں بڑے کیسز کی سماعت کی، آج سپریم کورٹ نے دو روز کی کارروائی کا تحریری فیصلہ بھی جاری کر دیا۔

تحریری حکم میں کہا گیا ہے کہ فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن (ایف ڈبلیو او) کے ڈی جی کراچی سرکلر ریلوے پر پیش رفت رپورٹ جمع کرائیں، گلشن اقبال حاجی لیموں گوٹھ میں غیر قانونی تعمیرات ختم کی جائیں، اور کمشنر کراچی نالے پر قائم تجاوزات کا خاتمہ یقینی بنائیں، اور کڈنی ہل پارک میں کچی آبادی فی الفور ختم کی جائے۔

عدالت نے کمشنر کراچی سے احکامات پر عمل درآمد کی رپورٹ بھی طلب کر لی ہے، تحریری حکم میں کہا گیا ہے کہ عدالت ہل پارک میں مکینوں کی نظر ثانی کی درخواستیں مسترد کرتی ہے۔

کراچی سرکلر ریلوے کی آزمائشی ٹرین حادثے کا شکار

عدالت نے کہا کہ باغ ابن قاسم پر کمشنر کراچی پیش رفت رپورٹ آئندہ سماعت پر پیش کریں۔

کمشنر کراچی نے عدالت کو بتایا کہ 158 غیر قانونی شادی ہالز ختم کیے جا چکے ہیں، جج نے فیصلے میں کہا رفاہی پلاٹوں اور رہائشی علاقوں میں قائم تمام شادی ہالز ختم کیے جائیں۔

عدالت نے تحریری حکم میں کہا کہ کراچی سرکلر ریلوے 9 ماہ میں مکمل کیا جائے۔ یاد رہے کہ دسمبر 2020 میں چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس گلزار احمد نے کراچی سرکلر ریلوے کی مکمل بحالی کا حکم دیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں