The news is by your side.

Advertisement

چوہدری شوگرملز کیس، مریم نواز 21 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

لاہور :  احتساب عدالت نے  چوہدری شوگرملز کیس میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نوازاور بھتیجے یوسف عباس کو 21 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا،  نیب نے دونوں ملزمان کے15روزہ جسمانی ریمانڈکی استدعاکی  تھی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت لاہور میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کے خلاف چوہدری شوگرملز کیس کی سماعت ہوئی، مریم  نواز  اور یوسف عباس کو احتساب عدالت کےجج جوادالحسن کےروبروپیش کیا گیا، اس موقع پر کمرہ عدالت میں کیپٹن (ر) صفدر ، جنید صفدر ، رانا اقبال ، خرم دستگیر بھی موجود تھے

عدالت میں نیب پراسیکیوٹر نے کہا مریم نوازکےاکاؤنٹ سےمشکوک ٹرانزیکشنزہوئیں، مریم نواز کو 2 مرتبہ نیب آفس طلب کیاگیا، جس پر عدالت کا کہنا تھا آپ کے پاس کیا مواد ہے، جو مریم نواز کو طلب کیاگیا۔

نیب پراسیکیوٹر نے بتایا 2008 میں مریم نوازکےنام پر11 ملین کےشیئرتھے، اکاؤنٹ میں کروڑوں کی رقم کہاں سےآئی تعین کررہےہیں، چوہدری شوگر ملز سے متعلق  نواز شریف سےتحقیقات کاآغازکیاگیا۔

نیب پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ مریم نوازچوہدری شوگرملزکی ڈائریکٹرہیں، وہ 1992 سے 1997 تک ڈائریکٹر رہیں، مریم نوازکے84لاکھ روپےکےشیئرتھے، جو بڑھ کر 41 کروڑ ہوگئے۔

مزید پڑھیں : نیب نے مریم نواز کو حراست میں لے لیا

نیب پراسیکیوٹر نے مزید بتایا شیئرزسعیدسلحدی اورصلاح الدین سے خریدےگئے، شیئرخریداری کی رقم سےمتعلق معلومات نہیں دی جا رہیں اور استدعاکی عدالت 15روزہ جسمانی ریمانڈمنظورکرے۔

احتساب عدالت نے  چوہدری شوگرملز کیس میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نوازاور بھتیجے یوسف عباس کے جسمانی ریمانڈپرفیصلہ محفوظ کرلیا۔

بعد ازاں محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے احتساب عدالت نے مریم نواز اور یوسف عباس کو 12روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا اور دونوں ملزموں کو 21 اگست کو دوبارہ پیش کرنے کی ہدایت کی۔

یاد رہے گزشتہ روز نیب نے چوہدری شوگرملز منی لانڈرنگ کیس میں مریم نواز کو گرفتار کرلیا تھا ، مریم نوا ز کو تفتیش کے لئے بلایا گیا تھا لیکن وہ نیب دفترمیں پیش ہونے کے بجائے والد سے ملنے کوٹ لکھپت جیل چلی گئیں، مریم نواز ملاقات کر کےنکلیں تو نیب ٹیم نے انھیں حراست میں لے لیا جبکہ نواز شریف کے بھتیجے یوسف عباس کو بھی گرفتار کرلیا تھا۔

خیال رہے نواز شریف کے بیٹے حسن اورحسین نواز بھی چوہدری شوگر ملز میں شیئر ہولڈر ہیں لیکن مریم نواز چوہدری شوگر ملز میں سب سے بڑی شیئر ہولدڑ ہیں، مریم نواز سے سوالنامے میں پوچھا گیا تھا کہ چوہدری شوگر ملزکی سرمایہ کاری کہاں سے آئی، غیرملکی شہریوں کی سرمایہ کاری اور لین دین کی تفصیل بھی بتائیں اور مختلف علاقوں میں خریدی گئی اراضی کی تفصیل بھی فراہم کریں۔

شریف خاندان پر چوہدری شوگرملز میں غیر ملکیوں کے نام پر اربوں کی سرمایہ کاری اور لاکھوں کےحصص دینے کا الزام ہے، غیر ملکیوں کے نام پر حصص متعدد مرتبہ مریم نواز، حسین نواز اور نواز شریف کو بغیر کسی ادائیگی واپس کیے گئے جبکہ نیب نے دعویٰ کیا ہے کہ مریم نوازاورچوہدری شوگر ملز کےدوسرے مالکوں کی لاکھوں روپے کی ٹی ٹیزکا سراغ لگایا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں