The news is by your side.

Advertisement

کیا کرونا ویکسینز کے استعمال سے ذہنی صحت بہتر ہوتی ہے؟ نئی تحقیق

واشنگٹن: امریکی محققین نے انکشاف کیا ہے کہ کرونا ویکسینز کا استعمال ذہنی صحت کے لیے بھی مفید ہے۔

امریکن جرنل آف پریونٹیو میڈیسین میں شایع شدہ مقالے کے مطابق نیو ہیمپشائر یونیورسٹی کی تحقیق میں محققین نے بتایا ہے کہ کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ویکسینیشن کرانا لوگوں کی ذہنی صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہوتا ہے۔

محققین کے مطابق ویکسینز کے استعمال سے چوں کہ بیماری سے متاثر ہونے اور اسپتال اور موت کے خطرے میں کمی آتی ہے، تو اس کا مثبت اثر ذہن پر بھی مرتب ہوتا ہے، اور کووڈ 19 سے تحفظ کا احساس ذہنی صحت اور معیار زندگی کو بھی بہتر بناتا ہے۔

واضح رہے کہ کرونا وائرس کی وبا کے باعث عالمی سطح پر ذہنی بے چینی اور نفسیاتی مسائل کی شرح میں بھی بہت اضافہ ہوا، جس کی متعدد وجوہ ہیں جیسے ملازمتوں اور آمدنی سے محرومی، سماجی طور پر تنہا ہو جانا وغیرہ۔

محققین اس سلسلے میں 8 ہزار بالغ افراد کے ڈیٹا کی جانچ پڑتال کی، ویکسینیشن سے ذہنی صحت پر مرتب ہونے والے اثرات کے بارے میں جاننے کے لیے ان سے مارچ 2020 سے جون 2021 کے دوران کئی بار انٹرویو کیے گئے، نتائج کے مطابق دسمبر 2020 سے جون 2021 کے دوران کرونا ویکسین کی کم از کم ایک ڈوز لینے والے بالغ افراد کے ذہنی دباؤ میں 7 فیصد کمی آئی، مکمل ویکسینیشن پر یہ شرح 25 فیصد تک گھٹ گئی۔

محققین کے مطابق اس کی وجہ ویکسینیشن کے بعد بیماری میں مبتلا ہونے کے خطرے میں کمی تھی، محققین نے بتایا کہ ہماری تحقیق سے ویکسینیشن کے ذہنی صحت کے لیے فوائد کا اظہار ہوتا ہے جو اس کا ایک اضافی فائدہ ہے۔

اس سے قبل ستمبر 2021 میں امریکا کی سدرن کیلیفورنیا یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں ایسے شواہد کو دریافت کیا گیا جن سے عندیہ ملتا ہے کہ کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ویکسینیشن کرانے کے بعد لوگوں کو تناؤ کا کم سامنا ہوتا ہے اور ذہنی صحت میں بہتری آتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں