The news is by your side.

Advertisement

کراچی سے انتہائی خطرناک تربیت یافتہ 2 دہشت گرد گرفتار

کراچی : سی ٹی ڈی نے کالعدم سپاہ محمد پاکستان کے انتہائی خطرناک تربیت یافتہ 2 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا ، ملزمان نے 2011 سے 2014 تک مذہبی ٹارگٹ کلنگ کا انکشاف کیا۔

تفصیلات کے مطابق کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ ( سی ٹی ڈی) نے منگھوپیر روڈ پر مبینہ مقابلے میں کالعدم سپاہ محمد پاکستان کے انتہائی خطرناک تربیت یافتہ 2 دہشت گرد گرفتار کرلئے۔

انچارج سی ٹی ڈی مظہر مشوانی نے بتایا کہ گرفتار دہشت گردوں میں آغا حسن اور محمد علی رضا نقوی شامل ہیں ، دوران مقابلہ ملزمان کے دو ساتھی کرار اور سید اوسط علی رضوی فرار ہوگئے۔

انچارج سی ٹی ڈی کا کہنا تھا کہ گرفتار دہشت گرد مختلف اداروں کو انتہائی مطلوب تھے، ملزمان کا سرغنہ اوسط علی رضوی منظم سلیپر سیل چلا رہا تھا.

مظہر مشوانی نے بتایا کہ ملزمان نے2011 سے 2014 تک مذہبی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث ہونے کا انکشاف کیا،2011میں ڈاکٹر محبوب کو شمسی اسپتال کے مرکزی دروازے پر ٹارگٹ کیا، 2013میں شاہد آٹوز کے مالک شاہد کو جہاز چورنگی کے قریب قتل کیا، 2013میں عیسیٰ بلوچ کو کلفٹن بلاک 4میں ٹارگٹ کیا اور 2014میں ملیر کھوکھرا پار میں توصیف اور تنویر کو ٹارگٹ کیا۔

انچارج سی ٹی ڈی کے مطابق سلیپر سیل سید اوسط کے زیر نگرانی چل رہا تھا، اوسط علی بتائے گئے ٹارگٹ کی ریکی کرواتا تھا اور سلیپر سیل کے شوٹر لڑکوں سے ٹارگٹ کلنگ کروائی جاتی تھی اور تمام شوٹرز کو 25ہزار روپے ماہانہ دیا جاتا تھا۔

مظہر مشوانی نے مزید بتایا کہ گرفتار ملزمان سے مزید تفتیش کا عمل جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں