The news is by your side.

Advertisement

پاپا نے پیٹرول چھڑک کر آگ لگائی، زخمی بچیوں کا بیان

کراچی: شہر قائد میں اپنی ہی بیوی کی دوسرے شخص سے شادی کرانے کے بعد پہلا شوہر سب کو پیٹرول ڈال کر جلانے پہنچ گیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق کراچی کے علاقے لائنز ایریا میں ایک افسوس ناک واقعہ پیش آیا، اپنی بیوی کو طلاق دے کر اس کی شادی کسی اور شخص سے کرانے کے بعد غصے میں آ کر ملزم نے سابقہ بیوی اور بچوں کو جلانے کی کوشش کی۔

پیٹرول پھینک کر آگ لگائے جانے سے 2 بچیاں نصف سے زائد جھلس گئیں، جنھیں فوری طور پر اسپتال پہنچایا گیا، جہاں ان کی مرہم پٹی کی گئی، اس واقعے میں سابقہ اہلیہ اور 3 سال کا بیٹا معجزانہ طور پر بچ گئے۔

بچوں کی ماں، جو واقعے میں محفوظ رہیں

زخمی ہونے والی دونوں بچیاں اسکول میں پڑھتی ہیں، جن کے نام نور فاطمہ اور ایمان فاطمہ ہیں، جب کہ محمد فیضان کو واقعے میں کوئی نقصان نہیں پہنچا۔ بچی نور فاطمہ کا کہنا تھا کہ اس نے خود اپنے پاپا کو پیٹرول پھینکتے ہوئے دیکھا۔

ننھا محمد فیضان، جو معجزانہ طور پر محفوظ رہا

خاتون نے اے آر وائی نیوز کو بتایا کہ تین ماہ قبل مجھے میرے شوہر نے طلاق دی اور خود ہی میرے شوہر نے دوسرے شخص سے میری شادی بھی کرا دی لیکن شادی کے بعد سابق شوہر دوسرے شوہر سے طلاق لینے کا مطالبہ کرتا رہا، اور پھر ایک رات ملزم نے پیٹرول سے جلانے کی کوشش کی۔

نور فاطمہ اور ایمان فاطمہ جن پر اپنے ہی باپ نے پیٹرول چھڑک کر آگ لگائی

خاتون نے بتایا کہ ہم نے ملزم کے خلاف مقدمہ بھی درج کرا دیا لیکن پولیس اس کو گرفتار نہیں کر رہی۔ زخمی ہونے والے بچی نے بھی مطالبہ کیا کہ پاپا جہاں بھی ملیں انھیں فوری گرفتار کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں