The news is by your side.

Advertisement

بالی وڈ کے مشہور اداکار پران کو ’’ولن آف دی ملینیئم‘‘ بھی کہا جاتا ہے

ہندی سنیما کے اداکار پران کو ’’ولن آف دی ملینیئم‘‘ بھی کہا جاتا ہے۔

ان کا شمار بالی وڈ کے منجھے ہوئے اداکاروں میں ہوتا ہے۔ پران فلموں میں اپنے منفی کرداروں کو اس خوبی سے نبھاتے کہ سنیما بین اُن سے نفرت کرنے پر مجبور ہو جاتے۔

بالی وڈ کے اس مشہور ولن اور معاون اداکار نے 12 جولائی 2013ء کو یہ دنیا ہمیشہ کے لیے چھوڑ دی تھی۔ وفات کے وقت ان کی عمر 93 برس تھی۔

پران کرشن سِکند پرانی دہلی کے محلّہ بلی ماراں میں پیدا ہوئے تھے۔ پران نے تقسیمِ ہند سے قبل لاہور میں فلمیں کیں اور بعد میں ممبٔی چلے گئے تھے۔

پران نے اپنے فلمی کیريئر کی شروعات ایک ہیرو کے طور پر کی۔ ان کی پہلی فلم ’جٹ یملا‘ سن 1940 میں ریلیز ہوئی، لیکن بعد کے برسوں میں وہ اپنی شکل و صورت، چال ڈھال اور دیکھنے کے انداز کی وجہ سے فلم سازوں اور ہدایت کاروں کو ولن کے لیے زیادہ بہتر لگے اور یوں ان کے کیریئر کا آغاز مختلف انداز سے ہوا۔

نصف صدی پر مشتمل اپنے کیریئر کے دوران پران نے لگ بھگ چار سو فلموں میں اداکاری کی اور ہندی سنیما میں صفِ اوّل کے ولن کہلائے۔

پران نے منفی مزاحیہ کردار بھی نبھائے اور ولن کے کیریکٹر کو ایک الگ پہچان دی۔

ضدی، بڑی بہن، میرے محبوب، زنجیر، اپكار کے علاوہ وہ کئی سپر ہٹ فلموں میں منفی کردار نبھاتے نظر آئے اور اپنے وقت کے سپراسٹارز کے ساتھ کام کیا۔ پران نے اپنے زمانۂ عروج میں مشہور ترین فلم ڈان، امر اکبر انتھونی اور شرابی میں کردار ادا کیے تھے۔

پران کی آواز سب سے مختلف تھی اور ان کے ڈائیلاگ بولنے کا انداز بھی جداگانہ۔ انھوں نے ایک مار دھاڑ کرنے والے، بدمعاش، چور اچکے اور قاتل سے لے کر نیک یا رحم دل انسان کے کردار بھی نبھائے جنھیں شائقین نے بہت پسند کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں