The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی فلمی صنعت کے منفرد ہدایت پرویز ملک کا تذکرہ

پرویز ملک اُن ہدایت کاروں میں‌ سے ایک تھے جنھوں نے اپنی فلموں کے لیے منفرد موضوعات کا چناؤ کیا، اور موسیقی اور شاعری پر خاص توجہ دی۔ انھوں نے پاکستانی فلم انڈسٹری کو متعدد کام یاب فلمیں دیں جو ان کی فنی مہارت اور کمال کی یادگار ہیں۔

پرویز ملک 1937ء کو پیدا ہوئے تھے اور 2008 میں‌ آج ہی کے دن وفات پائی۔ وہ پاکستانی فلموں کے چاکلیٹی ہیرو اور مقبول ترین اداکار وحید مراد کے ہم جماعت تھے۔ پرویز ملک ابتدائی تعلیم مکمل کرنے کے بعد امریکا چلے گئے جہاں انھوں نے فلم سازی کی تعلیم اور تربیت حاصل کی اور 1963ء میں وطن واپس آئے۔ یہاں اس وقت ان کے دوست اپنے والد کے فلمی ادارے کے تحت کام شروع کرچکے تھے جس میں پرویز ملک بھی شامل ہوگئے اور ہیرا اور پتھر، ارمان اور احسان جیسی کام یاب فلمیں بنائیں۔

پرویز ملک کی ہدایت کاری میں بننے والی فلموں کو ناقدین اور شائقین دونوں کی طرف سے بہت پزیرائی ملی۔ پہچان، تلاش، پاکیزہ، انتخاب، ہم دونوں، دوراہا اور غریبوں کا بادشاہ جیسی فلمیں پرویز ملک ہی کی یادگار ہیں۔

پرویز کی تین فلموں گمنام، کام یابی اور غریبوں کا بادشاہ) کو اس وقت ٹیکس سے مستثنٰی قرار دیا گیا تھا۔ فلمی صنعت کے لیے ان کے کام اور خدمات پر انھیں صدارتی تمغہ برائے حسنِ کارکردگی‎ سے بھی نوازا گیا۔ پرویز ملک کو فلمی صنعت کے لیے ان کے منفرد کام اور فلموں کی بدولت مدتوں یاد رکھا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں