The news is by your side.

استعفے سے متعلق صدر مملکت کا بڑا فیصلہ

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے مستعفی نہ ہونےکا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کے خلاف عدم اعتماد کی کامیابی کے بعد وزیراعظم اور کابینہ کو ڈی نوٹیفائی کر دیا گیا ہے جب کہ گورنر خیبرپختونخوا اور گلگت بلتستان نے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ہے۔

حکومتی تبدیلی کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر صدرمملکت سے متعلق پارٹی میں اعلی سطح کی مشاورت کی گئی اور انہیں مشورہ دیا گیا کہ وہ مستعفی نہ ہوں۔

صدر مملکت نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ عہدے سے استعفیٰ نہیں دیں گے اور اپنی آئینی ذمہ داریاں جاری رکھیں گے۔

سابق وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے ایک ٹوئٹ میں اطلاع دی ہے کہ تحریک انصاف نے اسمبلیوں سے مستعفی ہونے کا فیصلہ کیا ہے، کل وزیر اعظم کے انتخاب کے بعد یہ عمل قومی اسمبلی سے شروع کیا جائے گا۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام اعتراض ہے میں گفتگو کرتے ہوئے علی محمد خان نے کہا کہ میں کل ایک سپاہی کے طور پر اپنے مورچے میں کھڑا رہا اس وقت استعفیٰ دینا اپوزیشن کو کھلی چھوٹ دینے کے برابر ہو گا، 95 فیصدارکان سمجھتے ہیں کہ ہمیں میدان نہیں چھوڑناچاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں