The news is by your side.

Advertisement

سعودی نائب وزیر سیاحت شہزادی ھیفا بنت محمد سے متعلق چند حقائق

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے اتوار کو شاہی فرامین جاری کرکے اہم عہدوں پر تقرریاں کی ہیں جن میں دو خواتین وزراء کی بھی تقرری بھی شامل ہے۔

سودی ذرائع ابلاغ کے مطابق الشیھانہ بنت صالح بن عبداللہ العزاز کو ڈپٹی سیکریٹری کونسل آف منسٹرز اور شہزادی ھیفا بنت محمد بن سعود بن خالد آل عبدالرحمن آل سعود کو نائب وزیر سیاحت مقرر کیا گیا ہے۔

شہزادی ھیفا بنت محمد آل سعود اعلیٰ تعلیم یافتہ خاتون ہیں۔2008 میں نیو ہیون یونیورسٹی میں بزنس ایڈمنسٹریشن میں گریجویشن کیا۔ پھر2017 میں برطانیہ سے بزنس ایڈمنسٹریشن میں ماسٹزز کیا۔

شہزادی ھیفا آل سعود متعدد عہدوں پر فائز رہ چکی ہیں، انہیں27 ستمبر2017 میں سعودی فینسنگ فیڈریشن کی خواتین کمیٹی کی سربراہ متعین کیا گیا۔

14جنوری2020 سے محکمہ شہری ہوابازی کی مجلس انتظامیہ کی رکن اور17 جولائی 2020 سے فروغ سیاحت فنڈ کی مجلس انتظامیہ سے منسلک ہیں۔

شہزادی ھیفا نے اپنی عملی زندگی کا آغاز برطانیہ کے ایچ ایس بی سی بینک سے کیا تھا تاہم وہ 2009 میں سعودی عرب واپس آگئیں اور یہاں بینک ہی سے منسلک رہیں۔

Saudi Gazette (@Saudi_Gazette) / Twitter

سپورٹس میں بھی دلچسپی رکھتی ہیں،2017 سے 2019 کے دوران اسپورٹس پبلک اتھارٹی کا عہدہ قبول کیا۔ 2012سے 2016 کے دوران سعودی وزارت تعلیم میں مشیر اول کے طور پر کام کرتی رہیں ہیں۔

شہزادی ھیفا مارچ 2019 کے دوران معاون وزیر سیاحت برائے حکمت عملی و سرمایہ کاری کے عہدے پر فائز ہوئیں۔ متعدد مواقع پر اپنی صلاحیت کا لوہا منوایا ہے۔ کے برجستہ تبصروں نے رائے عامہ کو متوجہ کیا۔

Welcome to Messi in Jeddah .. Who is Princess Haifa Bint Mohammed Al Saud?

ارجنٹینا کے فٹبال سٹار لیونل میسی کو جدہ آنے دعوت دی اور ساحلی شہر کے تاریخی مقامات دکھائے، شہزادی ھیفا نے مئی 2022 کے دوران سوئٹزر لینڈ میں منعقدہ ورلڈ اکنامک فورم میں شرکت کی، ان کے بیانات میڈیا کی توجہ کا مرکز بنے رہے۔

انہوں نے یہ کہہ کر ورلڈ اکنامک فورم کے شرکا کی توجہ اپنی جانب مبذول کرائی کہ سعودی عرب نے عالمی سیاحت میں منفرد مقام حاصل کرلیا ہے اور وہ یہ اعزاز قومی شناخت اور اقدار برقرار رکھتے ہوئے حاصل کیے ہوئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں