The news is by your side.

Advertisement

معاشی دباؤ کے باوجود برطانوی حکام کا لاک ڈاؤن میں نرمی سے انکار

لندن : برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک راب نے معاشی دباؤ کے باوجود برطانوی لاک ڈاؤن میں نرمی کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن انتہائی حساس موڑ پر ہے، نرمی کرنا ممکن نہیں۔

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کے برطانیہ پر پے در پے وار جاری ہیں، گزشتہ روز بھی برطانیہ میں 800 سے زائد افراد دم توڑ گئے تھے، ملک بھر میں کرونا وائرس کی ایک اور لہر آنے کا خطرہ ہے جس پر برطانوی حکام نے ایک اور لاک ڈاؤن لگانے کا عندیہ دیا ہے۔

برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک راب نے معاشی دباؤ کے باوجود برطانوی وزیرخارجہ کا لاک ڈاؤن میں نرمی سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن حساس موٹ پر ہے، نرمی ممکن نہیں۔

انہوں نے کہا کہ وائرس کی دوسری لہر سے بچاؤ کیلئے لاک ڈاؤن پر فیصلہ سوچ سمجھ کر کریں گے، ہم نے پانچ کروڑ امیونٹی ٹیسٹ کٹس کا آرڈر کیا ہے، امیونٹی ٹیسٹ سے چیک کیا جا سکتا ہے کہ کسی شخص کو کرونا وائرس ہو کر ختم ہو چکا ہے یا نہیں۔

ڈومینک راب کا کہنا تھا کہ حکومتی ٹاسک فورس کے تعاون سے امیونٹی ٹیسٹ برطانیہ میں تیار ہوئے، جون سے دس پاؤنڈ میں امیونٹی ٹیسٹ عوام کو دستیاب ہو گا۔

حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ امیونٹی ٹیسٹ کرونا وائرس کے اختتام کی نوید ہو سکتے ہیں، امیونٹی ٹیسٹ کا نتیجہ بیس منٹ میں آ جائے گا۔

خیال رہے برطانیہ میں کوروناوائرس کےمریضوں کی تعداد1لاکھ33ہزار495 جبکہ وائرس کے باعث اموات 18ہزار100 تک جا پہنچی ہے۔

واضح رہے دنیا بھر میں کورونا سے ہلاکتیں 2 لاکھ 3 ہزار سے زائد ہوگئیں، مریضوں کی تعداد 29 لاکھ 39 ہزار سے تجاوز کرگئی۔ صرف امریکا میں ساڑھے 9 لاکھ مریض ہیں جن میں سے پندرہ ہزار کی حالت تشویشناک ہے، امریکا میں ہلاکتیں 54 ہزار سے بڑھ گئیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں