The news is by your side.

Advertisement

سابق صدر کو ضمانت کیوں ملی؟ عدالت نے تفصیلی فیصلہ جاری کردیا

سلام آباد: جعلی اکاؤنٹس کیسز میں سابق صدر آصف زرداری کو طبی بنیادوں پر ضمانت دینے کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا گیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق آصف زرداری کےخلاف نیو یارک اپارٹمنٹس پر نیب انکوائری کیس میں اسلام آباد کی احتساب عدالت نے آصف زرداری کی ضمانت منظوری کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا، احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف زرداری کو طبی بنیادوں پر ضمانت ددی۔

عدالت نے اپنے تحریری فیصلے میں کہا کہ آصف زرداری کو صحت کے مسائل کی وجہ سے کیس میں مستقل ضمانت دی جاتی ہے، ان کے خلاف نیویارک پراپرٹی کیس انکوائری کے مرحلے میں ہے، نیب کا کیس میں آصف زرداری کے خلاف شواہد اکٹھے کرنا ابھی باقی ہے، نیب ٹھوس شواہد کی بنیاد پر سابق صدر کی ضمانت منسوخی کی درخواست دے سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: نیویارک پراپرٹی کیس: آصف زرداری کو بڑا ریلیف مل گیا

عدالت نے کہا کہ نیب کو آصف زرداری کے خلاف اثاثہ جات کی شکایات 2018 اور 2019 میں موصول ہوئیں، نیب کو جے آئی ٹی رپورٹ اپریل 2019 میں موصول ہوئی، آصف زرداری دوسرے مقدمے میں گرفتار ہونے کے بعد دسمبر 2019 میں رہا ہوئے۔

یاد رہے کہ 11 جنوری کو احتساب عدالت اسلام آباد نے نیویارک پراپرٹی کیس کا محفوظ فیصلہ سنایا اور سابق صدر آصف علی زرداری کی ضمانت قبل از گرفتاری منظور کرنے کے ساتھ ساتھ اور سابق صدر کی بریت سے متعلق نیب کی درخواست کو مسترد کردیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں