The news is by your side.

Advertisement

جنرل قاسم سلیمانی کی تدفین ملتوی ، بھگڈر کے دوران 35 افراد جاں بحق

تہران : ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی تدفین میں بھگدڑ کے دوران 35افراد جاں بحق اور 48زخمی ہوگئے جبکہ ہجوم کے باعث جنرل قاسم سلیمانی کی تدفین ملتوی کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق بغدادمیں امریکی حملےمیں جاں بحق ایران کے جنرل قاسم سلیمانی کی آبائی علاقے کرمان میں نمازجنازہ اورتدفین میں ہزاروں افراد نے شرکت کی ، اس دوران بھگڈر مچنے سے 35افراد جاں بحق اور 48زخمی ہوگئے ، زخمی ہونے والے درجنوں افراد کی حالت نازک ہیں۔

جس کے بعد بے پناہ ہجوم کے باعث جنرل قاسم سلیمانی کی تدفین فی الحال ملتوی کردی گئی۔

جنرل قاسم سلیمانی کی موت پر ایران میں سوگ کا سماں ہے ، گذشتہ روز ایرانی جنرل قاسم سلیمانی، ابو مہدی المہندس اور ان کے دیگر ساتھیوں کی نماز جنازہ تہران میں ادا کی گئی تھی ، ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی نماز جنازہ رہبر اعلی آیت اللہ خامنہ نے پڑھائی۔

نماز جنازہ میں صدر، پارلیمنٹ کے اسپیکر، عدلیہ کے سربراہ ، علمائے کرام، ایران کے اعلی سیاسی و عسکری حکام و شخصیات اورعوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

واضح رہے بغداد ائیرپورٹ پر امریکی فضائی حملہ میں ایران کی القدس فورس کے جنرل قاسم سلیمانی کو ہلاک ہوگئے تھے،جس کے بعد ایرانی حکومت نے امریکی حملے کی مذمت کرتے ہوئے بدلہ لینے کا اعلان کیا تھا۔

عراق میں ایرانی کمانڈر قاسم سلیمانی کا نماز جنازہ ادا کیا گیا تھا م جس میں عراقی وزیر اعظم سمیت ہزاروں شرکا نے شرکت کی اور امریکا کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی تھی۔

خیال رہے قاسم سلیمانی کے جاں بحق ہونے کے بعد ایران کے مختلف شہروں میں امریکا کے خلاف مظاہرے کیے گئے، جن میں شرکا نے امریکا سے بدلہ لینے اور ہر صورت حکومت کا ساتھ دینے کا اعلان کیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں