The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس، پنجاب حکومت کو امریکا سے انجکشن درآمد کرنے کی اجازت مل گئی

لاہور: ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی (ڈریپ) نے امریکا سے ایکٹیمر انجکشن درآمد کرنے کی اجازت دے دی۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے بتایا کہ ڈریپ نے امریکا سے ایکٹیمر انجکشن درآمد کرنے کی اجازت دے دی۔

انہوں نے بتایا کہ ’ ایکٹیمرا انجکشن کرونا سے متاثرہ افراد کے  لیے فائدہ مند ہے پر تعداد محدود ہونے کی وجہ سے ہم ہرمریض کو یہ انجکشن نہیں لگا سکتے لہذا عوام احتیاطی تدابیر پر عمل کریں‘۔

مزید پڑھیں: کورونا سے بچانے والے ‘ایکٹیمرا انجکشن’ کو بطور ٹرائل ڈرگ استعمال کرنے کا فیصلہ

ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ عوام کرونا سے محفوظ رہنے کے لیے ماسک، سماجی فاصلے کا لازمی خیال رکھیں اور غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر نہ نکلیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’پنجاب میں کرونا مریضوں کے لیے 10 ہزار بستر موجود ہیں، صوبے میں 3 ہزار 55 مریض زیر علاج ہیں جن میں سے 215 کی حالت تشویشناک ہے جبکہ 193 مریض وینٹی لیٹر پر ہیں‘۔

صوبائی وزیر صحت کا کہنا تھا کہ این ڈی ایم اے صوبے کے لیے رواں ماہ ایک ہزار وینٹی لیٹر تیارکرےگا۔

یاد رہے کہ پنجاب حکومت نے گیارہ جون کو ایکٹیمرا انجکشن  بطور ٹرائل ڈرگ استعمال کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس ضمن میں انجکشن کےٹرائل کےلیے صوبائی کمیٹی بھی تشکیل دی گئی ہے۔

حکومت کی جانب سے جاری ہونے والے مراسلے میں بتایا گیا تھا کہ کمیٹی انجکشن پر تحقیقاتی ٹرائل کے نتائج کا جائزہ لے گی جبکہ تمام اسپتالوں کےایکٹیمرا انجکشن خریدنے پر پابندی ہو گی، محکمہ اسپیشلائزڈ ہیلتھ کیئراینڈ میڈیکل ایجوکیشن کی منظوری کے بعد ہی مریضوں پر انجکشن استعمال کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں