The news is by your side.

Advertisement

ڈرون کے ذریعے ویکسین پہنچانے کا کامیاب تجربہ

واشنگٹن: اقوام متحدہ کے عالمی ادارہ برائے صحت یونی سیف نے ڈرون کے ذریعے ویکسین کی فراہمی کا کامیاب تجربہ کیا۔

یونی سیف کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق بحرالکاہل میں واقع جزیرے وانواتو کے ایک بچے کو عالمی ادارہ صحت کی جانب سے ویکسین کی فراہمی بذریعہ ڈرون کی گئی۔

تجربے کے دوران ماہرین نے ڈرون میں ویکسین کا ڈبہ رکھا جس کے بعد اس نے دشوار گزار پہاڑی علاقے پر تقریبا چالیس کلومیٹر پرواز کی اور پندرہ سے بیس منٹ میں‌ دوا مقررہ ہدف تک پہنچائی۔

مزید پڑھیں: آتشزدگی میں پھنسے لوگوں کی مدد کرنے والا جدید ڈرون

ماہرین کے مطابق عام طور پر اس راستے سے دوا پہنچانے میں کئی گھنٹے کا وقت درکار ہوتا ہے کیونکہ وانواتو کا سفر کشتی کے ذریعے یا پیدل طے کرنا پڑتا ہے۔

یونی سیف نے تجربے کے لیے وانواتو کا انتخاب اس لیے کیا کیونکہ یہاں کا راستہ بہت زیادہ دشوار گزار ہے جبکہ اس علاقے میں 80 فیصد بچے ایسے ہیں جو ادویات سے محروم ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ڈرونز کی مدد سے آسمان پر انٹیل کے لوگو کا شاندار مظاہرہ

یونی سیف کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ہینریٹا فور کا کہنا تھا کہ ’ڈرون کی چھوٹی سی پرواز عالمی صحت کے لیے بڑا اقدام ہے، مستقبل میں ہم ادویات پہنچانے کے لیے ڈرون ٹیکنالوجی کو استعمال کریں گے‘۔

مقامی خاتون ڈاکٹر مریم نیم فل کا کہنا تھا ’ادویات کو ایک درجۂ حرارت پر رکھنا بہت ضروری ہے، چونکہ دریاؤں اور پہاڑوں پر سفر کرنا بہت مشکل کام ہے اس لیے ویکسین کی ترسیل ماہرین کی نگرانی میں ہر ماہ میں ایک بار ہی ہونا ممکن ہے‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں