The news is by your side.

Advertisement

جنوب مشرقی ایشیا کے اس پھل کی وجہ شہرت کیا ہے؟ جانئے

آسٹریلیا کے دارالحکومت کینبرا کے ایک علاقے کو ‘ خطرناک گیس لیکج ‘ کے باعث اچانک خالی کرالیا گیا مگر جب حقیقت عیاں ہوئی تو سب حیران رہ گئے۔

حال ہی میں کینبرا کے ایک خریداری کے مرکز میں واقع ایک دکان سے گیس لیک کے خدشے پر فائر فائٹرز وہاں پہنچے ، اس موقع پر انہوں نے لوگوں کو علاقے سے نکل جانے کا کہا۔

جانچ پڑتال کے بعد بھی فائر فائٹرز گیس لیک کے شواہد کو دریافت نہیں کرسکے،  ایک گھنٹے کی جانچ پڑتال کے بعد ایک دکان کے مالک نے بو کی ممکنہ وجہ کے بارے میں مشورہ دیا  جس پر اصل ‘مجرم’ کو دریافت کیا اور وہ تھا ایک پھل ڈیورن ۔

بیان کے مطابق یہ گیس لیک نہیں بلکہ ایک پھل ڈیورن کی بو تھی، اس پھل کی بو بہت زیادہ ہوتی ہے اور کچھ فاصلے تک بھی اسے سونگھا جاسکتا ہے۔

یہ بو کسی جان لیوا گیس سے بھی ملتی جلتی ہے اور کینبرا ایمرجنسی سروسز نے بھی اس کی تصدیق کی۔

 جنوب مشرقی ایشیا کا  یہ بے ضرر پھل ہے جو اپنی بو کے حوالے سے شہرت رکھتا ہے، اس پھل کی بو کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ  جیسے مردہ بلیوں کا ڈھیر ہو،  اس کی وجہ اس میں موجود خصوصی جینز ہیں جو سلفر کو بہت تیز رفتاری سے خارج کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ایسا پھل جو وٹامن سی کی نصف ضرورت کو پورا کرتا ہے

ویسے کینبرا میں ایسا پہلی بار نہیں ہوا بلکہ دو ہزار اٹھارہ میں بھی ایک یونیورسٹی کو بھی گیس لیک کے خدشے پر خالی کرا گیا مگر وہ بھی ‘ڈیورین ‘ کے باعث تھی جو ایک طالبعلم رکھ کر بھول گیا تھا۔

اسی طرح کا ایک واقعہ دو ہزار بیس میں ایک جرمن پوسٹ آفس میں بھی پیش آیا جسے ایک پراسرار بدبو دار پیکج پر خالی کرایا گیا تھا۔

آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ دیکھنے میں کسی کانٹوں والے جانور سے مشابہت رکھنے والے پھل ڈیورین پر تھائی لینڈ میں عوامی مقامات پر کھانے پر پابندی عائد ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں