The news is by your side.

Advertisement

ووٹر سروس 8300 سے زندہ افراد کو مردہ قرار دینے کے میسجز بھیجے جانے کا انکشاف

اسلام آباد : الیکشن کمیشن کی ووٹر سروس 8300 سے زندہ افراد کو مردہ قرار دینے کے میسجز بھیجے جانے کا انکشاف سامنے آیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں ہونیوالے ضمنی الیکشن کیلئے بڑے پیمانے پر بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا، اے آر وائی نیوز مبینہ پری پول رگنگ کے شواہد سامنے لے آیا۔

الیکشن کمیشن کی ووٹر سروس 8300 زندہ افراد کو مردہ قرار دینے لگی

ووٹر سروس 8300 سے زندہ افراد کو مردہ قرار دینے کے میسجز بھیجے جانے کا انکشاف

الیکشن کمیشن کی ووٹر سروس 8300 زندہ افراد کو مردہ قرار دینے کے میسجز بھیجنے لگی ووٹر سامعہ نے انکشاف کیا کہ میسج میں بتایا گیا میری موت کی تصدیق کے بعد ووٹ خارج کیا گیا ہے۔

ووٹرسامعہ نے مزید بتایا کہ میرے بھائی اور اسکے بیٹے کو بھی مردہ قرار دے کر ووٹ خارج کئے گئے ہیں۔

ووٹر فاطمہ نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا میرے خاوند کو بھی مردہ قرار دے دیا گیا۔

ووٹر عارف کا بھی کہنا تھا کہ ایک ہی خاندان کے ووٹروں کو مختلف حلقوں میں رجسٹر کیاگیا، میری نیبرہڈکونسل کے 11000میں سے 3225 ووٹ دوسری این سی کے ڈالے گئے۔

عارف نے بتایا کہ میں الیکشن کمیشن کو بھی متعدد بار شکایات کر چکا ہوں، میرے پاس لسٹ ہے جس میں فیک ووٹرزموجود ہیں، ہمارا ڈیٹا ہی غلط ہے، تو اس پر الیکشن کو کیسے قبول کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں