The news is by your side.

Advertisement

مصر نے ترک صدر کا مرسی کے قتل کا الزام مسترد کر دیا

قاہرہ: مصری حکومت نے ترک صدر طیب اردون کے بیان کو مسترد کر دیا ہے.

تفصیلات کے مطابق السیسی سرکار نے ترک صدر کی جانب سے سابق مصری صدر محمد مرسی کو قتل کیے جانے سے متعلق الزامات کو بے بنیاد قرار دیا ہے.

مصری وزیر خارجہ سامع شکری کا کہنا ہے کہ رجب طیب اردوان کا یہ الزام بے بنیاد اور غیر ذمہ دارانہ ہے، ہم اس کی مذمت کرتے ہیں.

سامع شکری کا کہنا تھا کہ ترک صدر کا یہ بیان دہشت گرد تنظیم اخوان المسلمون سے ان کے قریبی تعلقات کا عکاس ہے۔

خیال رہے کہ مصر کے پہلے منتخب صدر محمد مرسی پیر کے روز کمرہ عدالت میں بے ہوش ہوگئے تھے، بعد ازاں وہ انتقال کر گئے.

ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا تھا کہ مرسی کی موت طبعی نہیں تھی، بلکہ انھیں مصری حکومت نے قتل کیا، تاکہ ان کی آواز کو خاموش کیا جاسکے.

مزید پڑھیں: محمد مرسی شہید ہیں، مسلمان انہیں‌ ہمیشہ یاد رکھیں گے، ترک صدر

18 جون اردوان وان نے مصر کے سابق صدر محمد مرسی کی غائبانہ نمازِ جنازہ میں شرکت کی اور انہیں شہید قرار دیتے ہوئے شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا۔

اردوان نے محمد مُرسی کو شہید قرار دیتے ہوئے کہا کہ مسلمان اُن کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھیں گے کیونکہ انہوں نے ساری زندگی جدوجہد میں گزاری

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں