ناخلف بیٹے نے بیوی کے کہنے پر اپنی ضعیف ماں کو تشدد کر کے ہلاک کردیا egypt
The news is by your side.

Advertisement

ناخلف بیٹے نے بیوی کے کہنے پر اپنی ضعیف ماں کو تشدد کر کے ہلاک کردیا

قاہرہ : مصر میں بدبخت بیٹے نے بیوی کے اکسانے پر اپنی 81 سالہ بوڑھی ماں کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنا کر قتل کردیا اور لاش کو صحن میں چھوڑ کر خود بیوی کے ساتھ ڈنر پر چلا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سکندریہ کے رہائشی ایک شخص نے اپنی بیوی کے کہنے پر اپنی ضعیف اور بیمار ماں کو تشدد کا نشانہ بنایا یہاں تک کہ بوڑھی ماں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے خالق حقیقی سے جا ملی.

عرب ٹی وی نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ بدبخت بیٹے نے بیوی کے اکسانے پر81 سالہ ماں زینب السید کو بری طرح زدوکوب کیا اور تشدد کا نشانہ بناتا رہا اور جب بوڑھی ماں بے ہوش ہو گئی تو اسے گھر کے صحن میں پھینک کر دونوں میاں بیوی ڈنر کے لیے چلے گئے.

بوڑھی ماں کے منہ سے بہنے والے خون کو دیکھ کر ہمسائے گھر میں داخل ہوئے اور صحن میں بے یار و مددگار پڑی بوڑھی خاتون کو اسپتال پہنچایا جہاں ان کا علاج جاری تھا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکیں جس پر اسپتال انتظامیہ نے پولیس کو طلب کرلیا.

 

پولیس نے پڑوسیوں کی مدعیت میں مقدمہ درج کر کے ضعیف خاتون کے بیٹے اور بہو کی تلاش میں گھر پر چھاپا مارا تاہم دونوں گھر سے فرار ہو چکے تھے جن کا تعاقب کرتے ہوئے پولیس نے 24 گھنٹے کے اندر ہی دونوں کو حراست میں لے لیا.

دورانِ تفتیش بدبخت بیٹے نے یہ ہولناک انکشاف کیا کہ اس نے اپنی بیوی کے اکسانے اور غصہ دلانے پر اپنی بوڑھی کو مار مار کر ادھ موا کردیا اور بے ہوشی کی حالت میں صحن میں ڈال کر باہر چلا گیا تھا.

ناخلف بیٹے کا اپنی ضعیف و نحیف ماں پر بہیمانہ تشدد کی خبر جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی اور سوشل میڈیا پراس واقعے پرشدید رد عمل سامنے آیا ہے جس میں شہریوں نے ماں کے قاتل سے قصاص لینے کا مطالبہ کیا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں