spot_img

تازہ ترین

ایاز صادق قومی اسمبلی کے اسپیکر منتخب

مسلم لیگ ن کے سردار ایاز صدیق قومی اسمبلی...

کمالیہ: بارش میں گھر کی چھت گر گئی، ماں باپ اور بیٹا جاں بحق

کمالیہ کے علاقے فاضل دیوان میں مسلسل اور تیز...

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں اضافہ کردیا

نگراں حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے...

پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر امریکا نے صاف انکار کر دیا

پاکستان ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر امریکا نے...

الیکشن کمیشن گڑ بڑ والے حلقے میں الیکشن کالعدم قرار دے سکتا ہے، کنور دلشاد

الیکشن کمیشن کے سابق سیکریٹری کنور دلشاد نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن سیکشن 9 کے تحت گڑ بڑ والے حلقے میں الیکشن کالعدم قرار دے سکتا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق الیکشن کمیشن کے سابق سیکریٹری کنور دلشاد نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ الیکشن کمیشن سیکشن 9 کے تحت گڑ بڑ والے حلقے میں الیکشن کالعدم قرار دے سکتا ہے۔

کنور دلشاد نے کہا کہ فارم 47 تمام امیدواروں کے سامنے تیار کیا جاتا ہے اور اس میں ووٹوں سے متعلق تمام معلومات درج کی جاتی ہیں، اگر فارم 47 جلد بازی میں تیار کیا گیا ہے تو آر او کے خلاف قانونی کارروائی  ہونی چاہیے۔

سابق سیکریٹری الیکشن کمیشن کا یہ بھی کہنا تھا کہ انٹرنیٹ اور موبائل سروس بند ہونے سے الیکشن منیجمنٹ سسٹم میں خلل آیا۔

واضح رہے کہ قومی اسمبلی کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار 93 کی تعداد کے ساتھ  سب سے بڑا گروپ ہیں۔ ن لیگ 75 سیٹوں کے ساتھ دوسری، پی پی 54 کے ساتھ تیسری جب کہ ایم کیو ایم قومی اسمبلی کی 17 نشستوں کے ساتھ چوتھی پوزیشن پر ہیں۔

دوسری جانب انتخابی نتائج کے بعد مختلف سیاسی حلقوں کی جانب سے دھاندلی کی آوازیں اٹھائی جا رہی ہیں اور ہارنے والی جماعتوں کی جانب سے احتجاج بھی کیا جا رہا ہے۔

کراچی: پی ٹی آئی کیجانب سے حمایت یافتہ امیدواروں کی انتخابی نتائج کے خلاف درخواستیں دائر

الیکشن کمیشن نتائج چیلنج کیے جانے کے بعد قومی اسمبلی کے 10 اور صوبائی اسمبلیوں کے 16 حلقوں پر متعلقہ آر اوز کو حتمی نتائج جاری نہ کرنے کے احکامات پہلے ہی جاری کر چکا ہے۔

Comments

- Advertisement -