مراد علی شاہ ایک بار پھر وزیر اعلیٰ سندھ منتخب -
The news is by your side.

Advertisement

مراد علی شاہ ایک بار پھر وزیر اعلیٰ سندھ منتخب

کراچی: مراد علی شاہ ایک بار پھر وزیر اعلیٰ سندھ منتخب ہوگئے ہیں۔ ان کا مقابلہ گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس کے شہریار مہر سے تھا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی کا اجلاس اسپیکر آغا سراج درانی کی زیر صدارت شروع ہوا۔ اجلاس میں وزیر اعلیٰ کے لیے ووٹنگ کی گئی۔

قائد ایوان کے انتخاب کے لیے سندھ میں اکثریت حاصل کرنے والی جماعت پیپلز پارٹی نے مراد علی شاہ کو نامزد کیا تھا جبکہ اپوزیشن کی جانب سے گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس کے شہریار مہر امیدوار تھے۔

مراد علی شاہ نے97 ووٹ حاصل کیے جبکہ شہریار مہر کو 61 ووٹ ملے۔

گزشتہ روز سندھ اسمبلی میں اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کا انتخاب ہوا جس میں پیپلز پارٹی کے رکن آغا سراج درانی اسپیکر جبکہ ریحانہ لغاری ڈپٹی اسپیکر منتخب ہوئیں۔ آغا سراج نے دوسری بار اسپیکر کے عہدے کا حلف اٹھایا ہے۔

اسپیکر کے لیے آغا سراج درانی کا مقابلہ متحدہ اپوزیشن کے جاوید حنیف سے تھا۔

آغا سراج کو 96 ووٹ جبکہ ایم کیو ایم پاکستان سے تعلق رکھنے والے جاوید حنیف کو 59 ووٹ ملے، تین ووٹ مسترد بھی کیے گئے۔

دوسری جانب ڈپٹی اسپیکر کے لیے پیپلز پارٹی کی ریحانہ لغاری اور تحریک انصاف کی رابعہ اظفر آمنے سامنے تھیں۔

پولنگ کے بعد ریحانہ لغاری نے 98 جبکہ رابعہ اظفر نے 59 ووٹ حاصل کیے۔ ڈپٹی اسپیکر کے لیے کل 158 ووٹ کاسٹ کیے گئے جس میں سے ایک ووٹ مسترد ہوا۔

یاد رہے کہ انتخابات کے بعد سندھ اسمبلی کا پہلا اجلاس 13 اگست کو ہوا تھا جس میں نو منتخب اراکین اسمبلی نے حلف اٹھایا تھا۔

پیپلز پارٹی کو سندھ اسمبلی میں 75 ارکان کے ساتھ واضح اکثریت حاصل ہے۔ اسمبلی میں تحریک انصاف کے پاس 23، ایم کیو ایم کے پاس 16، گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس کے پاس 11، تحریک لبیک پاکستان کے پاس 2 اور متحدہ مجلس عمل کے پاس 1 نشست موجود ہے۔


سندھ اسمبلی کا قیام

یاد رہے کہ سندھ اسمبلی آئین پاکستان کے آرٹیکل 106 کے تحت قائم کی گئی۔

اس ایوان کی 168 نشستیں ہیں جن میں سے 130 پر براہ راست انتخابات منعقد ہوتے ہیں جبکہ 38 نشستیں خواتین اور غیر مسلم اقلیتوں کے لیے مخصوص ہیں۔

سندھ اسمبلی کا قیام سنہ 1937 میں عمل میں آیا تھا۔ اس کے پہلے اسپیکر دیوان بوج سنگھ تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں