spot_img

تازہ ترین

ایاز صادق قومی اسمبلی کے اسپیکر منتخب

مسلم لیگ ن کے سردار ایاز صدیق قومی اسمبلی...

کمالیہ: بارش میں گھر کی چھت گر گئی، ماں باپ اور بیٹا جاں بحق

کمالیہ کے علاقے فاضل دیوان میں مسلسل اور تیز...

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں اضافہ کردیا

نگراں حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے...

پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر امریکا نے صاف انکار کر دیا

پاکستان ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر امریکا نے...

حکومت سازی کا معاملہ، نواز شریف اور ایم کیو ایم پاکستان وفد کی ملاقات آج ہوگی

عام انتخابات کے نتائج کے بعد حکومت سازی کے لیے سیاسی جماعتوں نے جوڑ توڑ کا سلسلہ شروع کر دیا ہے نواز شریف اور ایم کیو ایم پاکستان کا وفد آج ملاقات کرے گا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق 8 فروری کو ہونے والے عام انتخابات کے اب تک موصولہ نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدواروں سب پر سبقت لیے ہوئے ہیں۔ ن لیگ کی دوسری اور پی پی کی تیسری پوزیشن ہے تاہم کوئی بھی جماعت تنہا حکومت بنانے کی پوزیشن میں نہیں ہے جس کے بعد سیاسی جماعتوں نے حکومت سازی کے لیے جوڑ توڑ شروع کر دیا ہے۔

اسی سلسلے میں ایم کیو ایم پاکستان کا وفد گزشتہ روز ن لیگ قیادت سے ملاقات کے لیے لاہور پہنچا تھا اور ہفتے کی شب ان کی ملاقات ہونا تھی جو کچھ وجوہات کی بنا پر نہ ہو سکی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آج مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف سے ایم کیو ایم پاکستان کے وفد کی ملاقات طے ہے جو دوپہر 12 بجے رائے ونڈ میں ہو گی۔

ذرائع کے مطابق اس ملاقات میں سابق وزیراعظم شہباز شریف، مریم نواز سمتی ن لیگ کے دیگر رہنما بھی شریک ہوں گے جب کہ ایم کیو ایم وفد میں گورنر سندھ کامران ٹیسوری، مصطفیٰ کمال اور ڈاکٹر فاروق ستار شامل ہوں گے۔

مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کی قیادت میں 24 گھنٹوں میں تیسری بار رابطہ

ذرائع کا کہنا ہے کہ ملاقات میں ایم کیو ایم اور ن لیگ ورکنگ ریلیشن سمیت دیگر امور بھی زیر غور آئیں گے جس میں حکومت سازی، انتخابات کے بعد کی صورتحال اور نمبر گیم سمیت وفاقی حکومت میں شمولیت پر بات چیت ہوگی۔

Comments

- Advertisement -