The news is by your side.

سیلاب زدہ علاقوں میں وبائی امراض کے پھیلاؤ میں شدت برقرار، مزید 65 ہزار کیس رپورٹ

اسلام آباد: ملک کے سیلاب زدہ علاقوں میں وبائی امراض کے پھیلاؤ میں شدت برقرار ہے، مزید 65 ہزار سے زائد کیس رپورٹ ہو گئے ہیں۔

ذرائع محکمہ صحت کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران سیلاب زدہ علاقوں میں وبائی امراض کے 65 ہزار 527 کیس رپورٹ ہوئے ہیں، جن میں سے بیش تر کیس سندھ سے متعلق ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سندھ میں 51 ہزار 823، بلوچستان میں 5 ہزار 691 کیس، خیبر پختون خوا میں وبائی امراض کے 3 ہزار 892، جب کہ پنجاب میں 3008 کیس رپورٹ ہوئے۔

گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران سیلاب زدہ علاقوں میں 6 ہزار 434 ڈائریا کے کیس، 16 ہیپاٹائٹس کیس، سانس کی بیماری کے 9 ہزار 440 نئے کیس، 1019 ملیریا کے، اور 60 ڈینگی کیسز رپورٹ ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق سیلاب زدہ علاقوں میں 7 ہزار 463 اسکن انفیکشن، 187 ٹائیفائیڈ کیس، 512 آئی انفیکشن، 10 ہزار 802 ڈائریا کیس، اور دیگر امراض کے 20 ہزار 414 کیس رپورٹ ہوئے۔

سندھ میں 4 ہزار 394 ڈائریا، 6 ہزار 843 اسکن انفیکشن کیس، اور سانس کی بیماری کے 6 ہزار 445 کیس رپورٹ ہوئے۔

ڈینگی کیسز پر سالانہ رپورٹ

ملک بھر میں رواں سال کے ڈینگی کیسز پر تفصیلی رپورٹ تیار ہو گئی ہے، جسے این آئی ایچ نے وزارت صحت کو بھجوا دیا ہے۔

اس رپورٹ کے مطابق رواں سال ملک بھر میں 24 ہزار 967 ڈینگی کیس سامنے آ چکے ہیں، اور ڈینگی سے 67 اموات ہو چکی ہیں، رواں سال بیش تر ڈینگی کیس اور اموات بھی سندھ سے رپورٹ ہوئیں۔

ذرائع کے مطابق رواں سال سندھ میں 7951 ڈینگی کیس، اور 33 اموات ہو چکی ہیں، خیبر پختون خوا میں 6412 ڈینگی کیس، اور 7 اموات، پنجاب میں 5202 ڈینگی کیس، اور 15 اموات، اسلام آباد میں 1991 ڈینگی کیس، اور 6 اموات، بلوچستان میں 3162 کیس، اور آزاد کشمیر 249 ڈینگی کیس رپورٹ ہوئے۔

ذرائع کے مطابق رواں سال بلوچستان اور آزاد کشمیر میں ڈینگی سے اموات نہیں ہوئیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں