The news is by your side.

Advertisement

یورپی یونین : چار ممالک کی سفری پابندیاں ختم نہیں ہوئیں

برسلز : یورپین ممالک کی جانب سے سفری پابندیاں ختم کرنے کے اعلان کے باوجود اسپين،فن لينڈ، ناروے اورسويڈن کیلئےسفری انتباہ  موجود ہے، یہ پابندیاں، کورونا وائرس کی عالمی وبا کا مقابلہ کرنے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات میں شامل تھیں۔

تفصیلات کے مطابق یورپین ممالک نے 15جون سے سفری پابندیاں ختم کرنے کا اعلان کیاتھا، جرمن وزارت خارجہ کی جانب سے بھی شہریوں کو27يورپی ممالک میں سفر کی اجازت دے دی گئی تھی۔

اس حوالے سے يورپی کميشن کا کہنا ہے کہ یورپین ممالک کے شہری اپنے پڑوسی ممالک میں بلارکاوٹ داخل ہوسکیں گے،
مؤثر پاليسيوں اور لاک ڈاؤن سے کئی يورپی ملکوں نے وبا پر قابو پایا، تاہم اسپين،فن لينڈ، ناروے اورسويڈن کیلئےسفری انتباہ اب بھی موجود ہے۔

واضح رہے کہ یورپی یونین نے رکن ممالک کو تجویز پیش کی تھی کہ بلاک کے باہر سے سفر کرنے والوں پر عائد سفری پابندیاں پہلی جولائی سے بتدریج ختم کی جائیں اور ان ممالک کی فہرست تیار کی جائے، جن پر پابندیاں ختم کی جا سکتی ہیں۔

یورپی یونین کے انتظامی ادارے، یورپی کمیشن نے رکن ممالک سے کہا تھا کہ بلاک کی سفری پابندیوں میں 15 جون تک توسیع کی جائے۔ یہ پابندیاں، کورونا وائرس کی عالمی وبا کا مقابلہ کرنے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات میں شامل تھیں۔

یورپی یونین ہوم افئیرز کمشنر محترمہ یِلوا جوہانسَن نے جمعرات کے روز اعلان کیا ہے کہ کمیشن نے ان اقدامات میں 30 جون تک توسیع کرنے اور اس کے بعد پابندیوں کو بتدریج ہٹانے کے مقصد سے آگے بڑھنے کی تجویز پیش کی ہے۔

محترمہ جوہانسَن نے یہ بھی کہا کہ کسی مخصوص ملک سے پابندیاں ختم کرنے کا فیصلہ اس ملک میں وبائی پھیلاؤ کی صورتحال، اور یہ دیکھ کر کیا جائے کہ آیا اس ملک نے یورپی یونین سے سفر کرنے والوں کو آنے کی اجازت دے رکھی ہے۔

انہوں نے کہا کہ رکن ملکوں کے درمیان تبادلہ خیال کے بعد بلاک تک رسائی دیے جانے والے ملکوں کی فہرست مرتب کی جائے گی۔ کمیشن نے رکن ملکوں سے آپس میں سرحدی کنٹرولز میں 15 جون سے نرمی لانے کی بھی سفارش کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں