site
stats
سندھ

سٹی کونسل کا اجلاس طے شدہ تھا، فیصل سبزواری

کراچی : ایم کیو ایم پاکستان کے مرکزی رہنما فیصل سبزواری نے کہا ہے کہ سٹی کونسل کا اجلاس طے شدہ تھا، اپوزیشن نے ارشد وہرہ کے استعفے کی بات پر احتجاج کیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی سب سے بڑی جماعت نے سٹی کونسل میں کامیاب چال چلتے ہوئے ڈپٹی میئر ارشد وہرہ کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک لانے سے گریز کیا اور میئر کراچی وسیم اختر پر اعتماد کی تحریک منظور کرالی۔

اس حوالے سے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے فیصل سبزواری نے کہا کہ اپوزیشن کی اپنی ایک سیاست ہے وہ سمجھتے ہیں کہ ڈپٹی میئر ارشد وہرہ کے واقعے کے بعد ان کو ایک موقع ملا ہے، اور انہوں نے اس سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کی ہے.

فیصل سبزواری نے کہا کہ ہم نے تمام ممبران کو اجلاس میں شرکت کرنے کا کہا تھا اور سب نے دیکھا کہ ہمارے205ارکان میں سے بہت بڑی تعداد آج اجلاس میں موجود تھی، ان کا مزید کہنا تھا کہ احتجاج کرنا اپوزیشن کا حق تھا جو اس نے استعمال کیا۔

علاوہ ازیں ڈپٹی میئر سے متعلق اظہار خیال کرتے ہوئے تحریک انصاف کے رہنما اسماعیل نے کہا کہ ارشد وہرہ کو بلا کر پوچھنا چاہئے تھا کہ وہ کون سے وسائل ہیں جو کہیں اور استعمال ہو رہے ہیں.

ارشد وہرا سے راتوں رات پارٹی بدلنے کا جواز بھی پوچھنا چاہئے تھا، انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کی اجلاس مؤخر کروانے کی حکمت عملی میں کامیاب رہی۔

اس حوالے سے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا کہ میئر کراچی وسیم اختر اپوزیشن اراکین کے شکوے اور شکایتیں دور کریں، حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ اختیارات کا رونا رونے والے کم از کم دستیاب وسائل تو استعمال کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top