The news is by your side.

Advertisement

فیصل واوڈا نے تاحیات نااہلی کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا

اسلام آباد: تحریک انصاف کے رہنما فیصل واوڈا نے تاحیات نااہلی کو اسلام آبادہائی کورٹ میں چیلنج کردیا، جس میں استدعا کی عدالت الیکشن کمیشن کا 9 فروری کا فیصلہ کالعدم قرار دے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما اور سابق ایم این اے فیصل واوڈا نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں تاحیات نااہلی کیخلاف درخواست دائر کردی۔

فیصل واوڈا نے درخواست میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ الیکشن کمیشن نےآرٹیکل63ون ایف کےتحت نااہل کیا اور آئینی تقاضے پورے نہیں کئےگئے۔

درخواست میں کہا گیا کہ الیکشن کمیشن نے مجھے مکمل طور پر سنےبغیرفیصلہ کیا ہے ، استدعا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ الیکشن کمیشن کا9فروری کافیصلہ کالعدم قرار دے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ رجسٹرار آفس نے فیصل واوڈا کی درخواست وصول کرلی ہے۔

یاد رہے الیکشن کمیشن نے فیصل واوڈا کو دوہری شہریت کیس میں نااہل قرار دے دیا تھا، فیصلے میں کہا گیا تھا کہ فیصل واوڈا نے اپنےکاغذات نامزدگی میں غلط بیانی سےکام لیا اور کاغذات نامزدگی کےوقت جعلی حلف نامہ جمع کرایا۔

الیکشن کمیشن نے اپنے فیصلے میں کہا تھا کہ فیصل واوڈا کو آرٹیکل 62ون ایف کےتحت نااہل قرار دیا گیا، وہ صادق اور امین نہیں رہے۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے دئیے جانے والے فیصلے میں کہا گیا کہ فیصل واوڈا نے بطور ایم این اے سینیٹ الیکشن میں ووٹ بھی غلط کاسٹ کیا، لہذا ان کی سینیٹ رکنیت کا نوٹی فیکیشن بھی واپس لیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں