The news is by your side.

Advertisement

جعلی کرونا ویکسینز سے ہوشیار، 2 افراد گرفتار

پشاور: خیبر پختون خوا میں کرونا سے بچاﺅ کی جعلی ویکسین اور ادویات بنانے میں گینگ کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایف آئی آے نے ایک کارروائی میں جعلی کرونا ویکسین بنانے میں ملوث 2 افراد کوگرفتار کر لیا ہے، وفاقی تحقیقاتی ادارے کے ڈپٹی ڈائریکٹر نے انکشاف کیا ہے کہ لاہور میں کرونا ویکسین اور بیماری کے لیے استعمال ہونے والی ادویات کی جعلی فیکٹری کی نشان دہی بھی ہوئی ہے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے عبدالرحمان آفریدی نے یہ انکشاف پشاور ہائی کورٹ میں کرونا ویکسین کی قیمتوں سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران کیا۔

انھوں نے عدالت کو بتایا کہ پشاور شہر اور نوشہرہ میں کارروائی کے دوران دو ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے جو کرونا کی جعلی ویکسین اور ادویات فروخت کر رہے تھے، ملزمان سے اس سلسلے میں مزید تفتیش جاری ہے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر نے بتایا کہ گرفتار ملزمان سے بھاری مقدار میں جعلی ادویات کے کارٹن برآمد کیے گئے ہیں، ملزمان نے لاہور میں جعلی فیکٹری بھی قائم ہونے کا انکشاف کیا، جو کرونا ویکسین بناتی ہے، جس پر متعلقہ فیکٹری کے خلاف کارروائی کے لیے پولیس بھجوائی گئی ہے۔

کیس کی سماعت کرتے ہوئے چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس قیصر رشید خان نے ریمارکس دیے کہ ایک طرف کرونا کی وجہ سے لوگ مر رہے ہیں، دوسری طرف جعلی ویکسین بنائی جا رہی ہے، عدالت نے سیکریٹری وزارت صحت کو احکامات جاری کیے کہ وہ اس معاملے کو دیکھے تاکہ لوگوں کا استحصال نہ ہو۔

عدالت نے جعلی ویکسی نیشن میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کا حکم بھی دیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں