شہری علاقوں میں مردم شماری کے دوران دھاندلی نہیں ہونے دیں گے، فاروق ستار
The news is by your side.

Advertisement

مردم شماری میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے، فاروق ستار

کراچی : متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان) سربراہ ڈاکٹر محمدفاروق ستار نے کہا ہے کہ مردم شماری کوئی دھاندلی نہیں ہونے دیں گے۔

وہ ہفتے کے شام ایم کیوایم (پاکستان) کے عارضی مرکزواقع پیرالہٰی بخش کالونی میں حق پرست سینیٹرز،اراکین قومی وصوبائی اسمبلی اور بلدیاتی نمائندگان کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔

ڈاکٹرمحمد فاروق ستار نے کہا کہ سندھ بھر کے عوام بالخصوص کراچی، حیدرآباد، میرپورخاص، سکھراور نوابشاہ سمیت شہری علاقوں کے عوام مردم شماری میں بھرپورحصہ لیں اورمردم شماری کوحقیقت پسندانہ بنائیں۔

انہوں نے بتایا کہ یونین کونسل کا ہر چیئرمین اپنے اپنے علاقہ میں مردم شماری کا فوکل پرسن ہوگاجوعوام کی مردم شماری میں حصہ لینے اور ان کی مدد کے لیے کلیدی کردار اداکرے گا۔

انہوں نے کہاکہ مئیرکراچی کے اختیارات کے لئے قانونی مشاورت مکمل کر لی ہے اور جس طرح نیو یارک نے اختیارات کے لئے عدالت سے رجوع کیا تھا کیوں کہ انہیں عوامی خدمات میں دشواریوں کا سامنا تھا اب ہم بھی وہی راستہ اختیار کر رہے ہیں۔

انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ 5 مارچ سے 15 مارچ کو ہونے والی مردم شماری میں بھرپور حصہ لیں تاکہ ان کے ساتھ ماضی میں ہونے والی زیادتیوں کا ازالہ ہوسکے اور مردم شماری کراچی کے ساتھ ساتھ سندھ کے دیگرشہری علاقوں کے لئے زندگی اورموت کامسئلہ ہے اس لیے مردم شماری میں بھرپور طریقے میں حصہ لیکراپناحقیقی حصہ لیناہے۔

سربراہ ایم کیوایم (پاکستان) ڈاکٹرمحمدفاروق ستار نے مزید کہا کہ فنڈزمیں گڑبڑکی جاتی رہی ہے،لاڑکانہ کے لئے 90ارب جاری ہوئے وہ کہاں گئے؟ ہم توسب کے حق کی بات کرتے ہیں،ہماراوزیراعلیٰ ہوگاتوہم 90 نہیں190ارب روپے لاڑکانہ کے لئے جاری کریں گے اوروہ وہاں لگیں گے بھی خواہ وہ خیرپور ہو، دادو ہو یا کوئی اور علاقہ، ہم بلا امتیاز رنگ و نسل خدمت کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ بہت ٹال مٹول سے کام لے لیا گیا ہے اب کراچی کواس کاجائزحصہ دینا ہوگا اور حق کو لیے بغیر ہم چین سے نہیں بیٹھیں گے اور شہری علاقوں کو ان کا حق ادا کریں گے۔

انہوں نے تمام اراکین سینیٹ، قومی وصوبائی اسمبلی اور بلدیاتی نمائندوں کومخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ کڑی نگاہ رکھیں کہ مردم شماری میں کوئی گڑبڑنہ ہواور عوام میں شعور بیدارکریں کہ وہ مردم شماری میں بھرپورحصہ لیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں