The news is by your side.

Advertisement

دنیا کا پہلا فیشن ڈیزائنر چارلس فریڈرک ورتھ

فیشن ڈیزائننگ ایک تخلیقی عمل ہے اور اب اسے آرٹ تسلیم کیا جاتا ہے۔

کہتے ہیں‌ لباس انسان کی شخصیت کا آئینہ دار ہوتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ فیشن اور اسٹائل کے ماہر دنیا میں نت نئے رجحانات متعارف کروا رہے ہیں جس میں ہماری ثقافت اور ذوق کو پیشِ نظر رکھا جاتا ہے۔

دنیا بھر میں فیشن انڈسٹریز فروغ پا رہی ہیں اور یہ ہنر فیشن ڈیزائننگ کہلاتا ہے۔

فیشن انڈسٹری کا آغاز انیسویں صدی میں ہوا۔ چارلس فریڈرک ورتھ کو پہلا ڈیزائنر تسلیم کیا جاتا ہے جس نے اپنا برانڈ متعارف کروایا تھا۔ یہی وہ شخص ہے جس نے سب سے پہلے خریداروں پر زور دیا کہ وہ لباس منتخب کرنے کے لیے اپنی شخصیت اور مزاج کو اہمیت دیں اور اس ضمن میں ضرور راہ نمائی حاصل کریں۔

ہمارے ملک میں بھی اب کئی ادارے فیشن ڈیزائننگ میں ڈگری پروگرام اور مختصر مدتی کورسز کروا رہے ہیں۔ ان اداروں میں طلبا کو دورِ جدید میں‌ پیٹرن میکنگ، سیونگ، ٹیکسٹائل ڈیزائننگ، فائونڈیشن ڈیزائننگ اور اس حوالے سے ٹیکنالوجی کی تعلیم اور تربیت دی جاتی ہے۔

مغربی ممالک کی طرح پاکستان میں بھی فیشن انڈسٹری میں جدت طراز اور آرٹسٹ آگے آئے ہیں اور نام و مقام بنایا ہے۔ فیشن اور اسٹائل کی دنیا میں‌ قدم رکھنے والے اپنی تخلیقی صلاحیتوں کو آزماتے ہوئے اقتصادی ترقی اپنا کردار ادا کرسکتے ہیں اور کارخانوں سے لے کر بوتیک تک روزگار کی فراہمی کا ذریعہ بن سکتے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں