The news is by your side.

Advertisement

اچانک کروڑ پتی بننے والی لڑکی کا انجام

لندن: دولت اور بے تحاشا دولت کی تمنا ہر شخص کرتا ہے، لیکن جب قسمت سے دولت ہاتھ لگتی ہے تو اسے سنبھالنا بھی ایک بڑی اور مشکل ذمہ داری ہوتی ہے۔

ایک برطانوی لڑکی ایسی ہی صورت حال سے گزری، قسمت نے اسے اچانک کنگال سے کروڑ پتی بنایا، اور پھر وہ اسے سنبھال نہ سکی، اور کروڑ پتی سے پھر کنگال ہو گئی۔

کیلی راجرز نے 2003 میں 16 سال کی عمر میں 18 لاکھ ڈالرز کی لاٹری جیتی تھی، اس وقت وہ یہ لاٹری جیتنے والی کم عمر ترین لڑکی تھی۔

تاہم کیلی راجرز اتنی بڑی رقم کو سنبھال نہ سکی، اور اس نے یہ رقم نشہ کرنے اور پارٹیوں میں اڑا دی، وہ اپنے دوستوں اور رشتے داروں پر بے دردی سے رقم خرچ کرتی تھی۔

کیلی راجرز جس کی عمر اب 33 سال ہے اور وہ چار بچوں کی ماں ہے، کو نشے کی ایسی لت پڑ چکی ہے کہ حال ہی میں اس نے کوکین کے زیادہ استعمال کی وجہ سے اپنی فور بائی فور گاڑی ٹکرا دی تھی، جس کی وجہ سے اس پر ڈرائیونگ کی پابندی عائد کی جا چکی ہے۔

کروڑ پتی سے واپس کنگال بننے کے بعد جب اسے ہوش آیا تو وہ دوستوں اور رشتہ داروں کو قصور وار ٹھہرانے لگی، کیلی راجرز نے کہا دوستوں اور رشتے داروں نے اس سے فائدہ اٹھایا اور بعد میں اسے اکیلا چھوڑ دیا۔

تاہم کیلی راجرز نے اپنی بھی غلطی تسلیم کی، اس کا کہنا تھا کہ ہر شخص غلطی کرتا ہے اور مجھ سے بھی ہوئی، جب میں نے لاٹری جیتی تو صرف سولہ سال کی تھی، میں کسی کی سننے کو تیار ہی نہیں تھی۔

دل چسپ بات یہ ہے کہ چوٹ کھانے کے بعد کیلی راجرز نے لاٹری مالکان سے درخواست کی ہے کہ لاٹری جیتنے کی عمر کی کم سے کم حد 18 سال کی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں