The news is by your side.

Advertisement

فضل الرحمان کے مارچ کو زیادہ اہمیت نہ دی جائے: وزیر اعظم

نوکریوں سے متعلق بیان پر وزیر اعظم کی فواد چوہدری کو احتیاط کی ہدایت

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کے مارچ کو زیادہ اہمیت نہ دی جائے، مارچ سے متعلق کمیٹی قائم کر دی ہے، اب وہی معلامات دیکھے گی۔

تفصیلات کے مطابق ذرایع نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی کور کمیٹی کے اجلاس میں وزیر اعظم نے پی ٹی آئی رہنماؤں کو مولانا کے مارچ کو اہمیت دینے سے منع کر دیا ہے۔

ذرایع کا کہنا ہے کہ ارکان نے آزادی مارچ سے نمٹنے کے لیے مختلف تجاویز دیں، تاہم وزیر اعظم نے کہا مارچ کو زیادہ اہمیت نہ دیں، احتجاج پر گفتگو سے وقت ضایع نہیں کرنا چاہتے۔

وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ ہمارا مؤقف میڈیا پر درست انداز میں پیش نہیں ہو رہا ہے، جس پر کور کمیٹی نے حکومتی مؤقف بھرپور انداز میں پیش کرنے کے لیے تجاویز دیں۔

یہ بھی پڑھیں:  مولانا فضل الرحمان نے حکومت کی مذاکرات کی پیش کش مسترد کر دی

وزیر اعظم نے وفاقی وزیر فواد چوہدری کے نوکریوں، 400 اداروں کی بندش کے بیان پر بھی تبصرہ کرتے ہوئے انھیں ایسے بیانات سے متعلق محتاط رہنے کی ہدایت کر دی۔

ان کا کہنا تھا کہ انھیں سعودی عرب کے دورے میں اس بیان کے متعلق معلوم ہوا، ہمیں مایوسی کی باتیں نہیں کرنی چاہیے۔ ذرایع کے مطابق فواد چوہدری نے اس موقع پر اپنا مؤقف بیان کرتے ہوئے کہا کہ کچھ ٹی وی چینلز میری کردار کشی کر رہے ہیں، میرے بیان کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا۔

واضح رہے کہ اپوزیشن سے مذاکرات کے لیے وزیر اعظم نے پرویز خٹک کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دے دی ہے تاہم مولانا فضل الرحمان کی ایک ہی رٹ ہے کہ مذاکرات نہیں ہوں گے، حکومت کو جانا پڑے گا۔

دوسری طرف نوکریوں کے حوالے سے فواد چوہدری نے کہا تھا کہ پی ٹی آئی کے ایک کروڑ نوکریاں دینے کے اعلان کا مطلب سرکاری نوکریاں نہیں، بے دریغ ملازمتیں دے کر اداروں کو دیوالیہ کرنا پی پی اور ن لیگ کا وتیرہ تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں