The news is by your side.

Advertisement

ایف بی آر کا بے نامی جائیدادوں کے مالکان کو نوٹس بھجوانے کا فیصلہ

اسلام آباد : ایف بی آر نے بے نامی جائیدادوں کے مالکان کو نوٹس بھجوانے کا فیصلہ کرتے ہوئے لاہور میں بے نامی جائیدادیں رکھنے والے 45 افراد کا ڈیٹا حاصل کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے اربوں روپے کی بے نامی جائیدادوں کے مالکان کو نوٹسز بھجوانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اور لاہور میں بے نامی جائیدادیں رکھنے والے 45 افراد کا ڈیٹا بھی حاصل کر لیا۔

ایف بی آر حکام کا کہنا ہے کہ بے نامی جائیدادوں کے جن مالکان کو نوٹسز بھجوائے جا رہے ہیں، ان کے نام ابھی افشا نہیں کئے جائیں گے تاکہ وہ قانونی آڑ لے کر فائدہ نہ اٹھا سکیں۔

ایف بی آر حکام کا دعوٰی ہے کہ ان افراد کے پاس قیمتی گھر، پراپرٹیز اور لگژری گاڑیاں بھی ہیں اور یہ سال میں کئی کئی بار بیرون ملک جاتے ہیں، وہاں ان کے رہن سہن اور شاپنگ کا ڈیٹا بھی حاصل کر لیا گیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ وہ افراد جو بے نامی جائیدادوں کے مالک نکلے ہیں، انہیں مرحلہ وار نوٹسز بھجوائیں گے اور ان کو دفاع کا پورا موقع دیا جائے گا اور قانونی تقاضےپورے ہوں گے، کسی سے ناانصافی نہیں کی جائے گی۔

یاد رہے ایف بی آر نے بے نامی اثاثوں پر کریک ڈاؤن کے لیے اتھارٹی قائم کی اور بےنامی جائیدادوں کی تحقیق کے لیے بےنامی زونز بنا دیئے گئے ہیں ، بےنامی زونز میں ایف بی آر کے اعلیٰ افسران بھی تعینات کئے گئے ہیں۔

دوسری جانب چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے صوبائی چیف سیکرٹریز کو خط لکھ کر غیر منقولہ جائیداد کی تفصیلات طلب کر لیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں