The news is by your side.

Advertisement

خاتون گھڑ سوار کی دردناک موت، کمزور دل افراد ویڈیو نہ دیکھیں

استنبول : ترکی میں ہونے والی گھوڑوں کی عالمی ریس میں ایک خاتون گھڑ سوار کے ساتھ ایک خوفناک واقعہ پیش آیا جسے دیکھ کر لوگ خوفزدہ ہوگئے۔

گھوڑ سواری ایک ایسا کھیل ہے جو انسان کی فٹنس اور پٹھوں کی لچک کو بہتر کرتا ہے لیکن دوسری جانب ذرا سی بے احتیاطی سے  یہ خطرناک کھیل بن جاتا ہے جس سے آپ کو جان کے لالے بھی پڑ سکتے ہیں۔

ایک ایسا ہی واقعہ ترکی کے شہر استنبول میں ہونے والی عالمی ریس میں پیش آیا، جس میں ہنگری کی رہائشی 21سالہ لڑکی ایسٹر جیلس اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھی۔

اتوار5 ستمبر2021کو استنبول کے ویلی فینڈی ریس کورس میں فیگینٹری امیچر ویمن رائیڈرز ورلڈ چیمپئن شپ میں ریس کے دوران ایسٹر جیلس اپنے پالتو گھوڑے سے اچانک گرگئی، جس کے باعث اس کے سر میں شدید چوٹیں آئیں۔

ریس میں اس کے ساتھ ایک اور فرانسیسی خاتون گھڑ سوار ٹریسی مینیوٹ کو بھی حادثہ پیش آیا تھا، دونوں خواتین کو اسپتال داخل کیا گیا تاہم ٹریسی کوابتدائی طبی امداد کے بعد اسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا۔

شدید زخمی حالت ہونے کے باعث ایسٹر جیلس کو اسپتال میں ہی داخل کرلیا گیا اور اگلے دن اس کی سرجری کی گئی، تاہم 13 روز زندگی اور موت کی کشمکش میں رہنے کے بعد جوکی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں