The news is by your side.

Advertisement

وفاقی حکومت نے ایف آئی اے کو پیکا آرڈیننس کے تحت گرفتاری سے روک دیا

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے ایف آئی اے کو پیکا آرڈیننس کے تحت گرفتاریوں سے روک دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیکا آرڈیننس کے تحت گرفتاریوں سے وفاقی حکومت نے ایف آئی اے کو روک دیا ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے یہ ہدایت گزشتہ روز جاری کی گئی تھی۔

وفاقی حکومت کی ہدایت ڈی جی ایف آئی اے تک پہنچا دی گئی، ذرائع کے مطابق پیکا ترمیمی آرڈیننس پر عمل درآمد کے لیے قواعد و ضوابط بنانے پر کام جاری ہے۔

ایف آئی اے کو ہدایت کی گئی ہے کہ قواعد و ضوابط تیار ہونے تک کسی کو گرفتار نہ کیا جائے، پیکا آرڈیننس پر عمل درآمد کیسے کرنا ہے، اس سلسلے میں قواعد میں تفصیلات شامل کی جائیں گی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے پیکا قانون کی ‘ دفعہ 20 ‘ کےتحت گرفتاریوں سے روک دیا

خیال رہے کہ آج اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھی ایف آئی اے کو پیکا آرڈیننس کے تحت گرفتاریوں سے روکا ہے، پیکا ایکٹ سے متعلق تمام زیر سماعت کیسز بھی یک جا کر دیے گئے ہیں، اور عدالت نے کل اٹارنی جنرل کو طلب کر لیا ہے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ ایس او پیز کے سیکشن 20 کے تحت کسی شکایت پر گرفتاری نہ کی جائے، عمل نہ ہوا تو ڈی جی ایف آئی اے اور سیکریٹری داخلہ ذمہ دار ہوں گے، عوامی نمائندوں کے لیے تو ہتک عزت قانون ہونا ہی نہیں چاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں