The news is by your side.

Advertisement

ملزم کے کرپٹو کرنسی اکاؤنٹ چھپانے میں مدد، ایف آئی اے اہلکار گرفتار

اسلام آباد: دہشت گردی کے الزام میں گرفتار ملزم کے کرپٹو کرنسی اکاؤنٹ چھپانے میں مدد کرنے پر 2 ایف آئی اے اہلکاروں کو گرفتار کر کے ان کے خلاف مقدمہ درج کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے کے ہاتھوں گرفتار ملزم حافظ اصغر کو دوران ریمانڈ غیر قانونی سہولت فراہم کرنے پر ایف آئی اے اہل کاروں کے خلاف مقدمہ درج کر دیا گیا۔

ڈی جی ایف آئی اے ثنا اللہ عباسی نے محکمے کے اندر کرپشن کے خلاف زیرو ٹالرنس پالیسی اپنا رکھی ہے، اس لیے معاملے کا علم ہوتے ہی انھوں نے اس کا نوٹس لے لیا، اور ایف آئی اے اہل کاروں کو فوری طور پر گرفتار کر لیا گیا۔

ایف آئی اے کے مطابق ہیڈ کانسٹیبل احتشام اور فرمان ایاز نے دوران حراست، دہشت گردی کے ملزم حافظ اصغر کے کرپٹو کرنسی اکاؤنٹ کو ایف آئی اے کی تفتیش میں چھپانے میں مدد فراہم کی تھی۔

ملزمان نے مبینہ طور پر دوران ڈیوٹی ملزم کو انٹرنیٹ اور لیپ ٹاپ کی سہولت فراہم کی، اور اس طرح بٹ کوائن اور دیگر کرپٹو کرنسی چھپانے کی کوشش میں اسے اعانت پہنچائی گئی۔

گرفتار ملزم نے فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے بٹ کوائنز اور دیگر کرپٹو کرنسی کے اکاؤنٹ کے پاس وَرڈ تبدیل کیے، تاہم انسداد دہشت گردی ونگ نے ثبوتوں کو ضائع کرنے اور کرپٹو کرنسی کو منتقل کرنے کی کوشش ناکام بنا دی۔

ایف آئی اے اینٹی کرپشن سرکل نے ملازمین کے خلاف اینٹی کرپشن کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر کے ملزمان سے مزید تفتیش شروع کر دی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں