تازہ ترین

ایرانی صدر کی مزار اقبال پر حاضری، پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی

لاہور: ایران کے صدر ابراہیم رئیسی کی لاہور آمد...

پاک ایران سرحد پر باہمی رابطے مضبوط کرنے کی ضرورت ہے، آرمی چیف

راولپنڈی: آرمی چیف جنرل عاصم منیر کا کہنا ہے...

پی ٹی آئی دورِحکومت کی کابینہ ارکان کے نام ای سی ایل سے خارج

وفاقی حکومت نے پی ٹی آئی دورِحکومت کی وفاقی...

توشہ خانہ گھڑی خریدنے کا دعویٰ کرنے والے عمرفاروق ظہور سے متعلق بڑا انکشاف

اسلام آباد : ایف آئی اے رپورٹ میں انکشاف کیا گیا کہ توشہ خانہ گھڑی خریدنے کا دعویٰ کرنے والا عمرفاروق ظہور اشتہاری ہے اور بیرون ملک سے پاکستان آیا ہی نہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ نے شہزاد اکبر، صوفیہ مرزا اور سابق ڈی جی ایف آئی اےثنااللہ عباسی کیخلاف مقدمہ خارج کرنے کا فیصلہ جاری کردیا، توشہ خانہ گھڑی خریدنے کا دعویٰ کرنے والے عمرفاروق کی مدعیت میں 2 مقدمات درج تھے۔

ایف آئی اےرپورٹ میں انکشاف کیا گیا کہ ملزم عمرفاروق ظہور اشتہاری ہے اور بیرون ملک سے پاکستان آیا ہی نہیں۔

عدالت نے آئی جی اسلام آباد کو تحقیقات کرکےملوث پولیس اہلکاروں کیخلاف کارروائی کاحکم دیتے ہوئے کہا آئی جی 2 ماہ میں تحقیقات کرکےرپورٹ جمع کرائے۔

اسلام آبادہائیکورٹ نے انچارج پولیس اسٹیشن سیکرٹریٹ اوردیگراہلکاروں کیخلاف تحقیقات کرکےکارروائی کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ اشتہاری عمرفاروق ظہورنےاگراسلام آبادتھانہ آکرکمپلینٹ دائر کی تو گرفتارکیوں نہیں کیا؟ ایف آئی آر کے مطابق عمرفاروق ظہورنے تھانے آکرکمپلینٹ دائرکی۔

عدالت کا کہنا تھا کہ ایف آئی اےکی رپورٹ کےمطابق عمرفاروق اشتہاری ہےبیرون ملک سےپاکستان ہی نہیں آیا، اگر عمرفاروق ظہور بیرون ملک ہے تو کس نے عمر فاروق بن کر کمپلینٹ دائر کی؟تحقیقات کریں، تھانہ سیکرٹریٹ میں ایک ہی جرم میں 2مقدمے کیسے درج ہوئے تحقیقات کریں۔

فیصلے میں کہا گیا کہ لاہورکے مقدمے میں جو الزامات عمر فاروق پر تھے ان کا جواب ملزم عدالت کے سامنے دے سکتا ہے، لاہور مقدمہ میں لگےالزامات پرعدالت جواب دینےکی بجائےاسلام آبادمیں مقدمہ درج کرنا اختیار سے تجاوز ہے۔

عدالت نے مزید کہا کہ جس مقدمے کا اشتہاری ہےانہی الزامات کیخلاف دوسری جگہ مقدمات درج کرنے سے نیا فلڈ گیٹ کھل جائے گا، انچارج پولیس اسٹیشن سیکرٹریٹ نےکیسزاندراج میں غیر معمولی دلچسپی لی، اختیارات سے تجاوز کا یہ کیس ہے تحقیقات کرے کارروائی کریں رپورٹ جمع کریں۔

Comments

- Advertisement -