The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: طویل عرصے سے مقیم فلپائنی نرس انتقال کر گئیں

ریاض: سعودی عرب میں طویل عرصے سے مقیم ایک فلپائنی نرس انتقال کر گئیں جس نے مقامی افراد کو غمزدہ کردیا، نرس اپنی نرم دلی کے باعث بے حد مشہور تھیں اور انہیں ام اسماعیل کہا جاتا تھا۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق مسلسل 40 برس تک خدمت کرنے والی فلپائنی نرس کے انتقال پر باحہ میں رنج و الم کی لہر دوڑ گئی، نرس باحہ کی القری کمشنری میں رہائش پذیر تھیں اور وہ گردے فیل ہو جانے کے باعث زندگی کی بازی ہار گئیں۔

مقامی افراد فلپائنی نرس کو ام اسماعیل کہہ کر مخاطب کرتے تھے، نرس ہیلتھ سینٹر آنے والے مریضوں کی مدد اور علاج میں ہمیشہ پیش پیش رہتی تھیں ،علاقے کے تمام لوگ ان سے مانوس تھے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق ام اسماعیل پر ڈیوٹی کے دوران فالج کا حملہ ہوا تھا، انہیں فوری طور پر اسپتال لے جایا گیا جہاں ان کی حالت مزید خراب ہوگئی اور ان کے گردے فیل ہوگئے۔ مقامی افراد نے ان کی مدد کے لیے 25 ہزار ریال جمع کر کے روانہ کیے تھے۔

بعد ازاں فلپائنی نرس صحت زیادہ خراب ہوجانے پر فلپائن واپس چلی گئی تھیں جہاں ان کی خواہش تھی کہ اپنے رشتہ داروں کے درمیان رہ کر علاج کروائے۔

تاہم وطن پہنچنے کے بعد ان کی حالت زیادہ خراب ہوگئی اور بالآخر وہ چل بسیں، نرس کی موت کی اطلاع پر مقامی افراد نے غائبانہ نماز جنازہ ادا کی اور شاندار الفاظ میں انہیں خراج عقید پیش کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں