The news is by your side.

Advertisement

مارگلہ پہاڑیوں پر آگ کا تیسرا دن، پاک فوج سے تعاون طلب

اسلام آباد: مارگلہ کی پہاڑیوں پر 29 مئی سے لگی آگ بے قابو ہوگئی ہے، کیپٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی کا محکمہ ماحولیات اور ایمرجنسی یونٹ آگ بجھانے میں ناکام ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق سی ڈی اے نے تین دن سے مارگلہ پہاڑیوں پر لگی آگے بجھانے کے لیے نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی سے رابطہ کیا، تاکہ پاک فوج کا تعاون حاصل کیا جاسکے۔

دوسری طرف این ڈی ایم اے نے پاک فوج سے مدد طلب کر لی ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی نے پاک فوج سے آگ بجھانے کے لیے ہیلی کاپٹر مانگے ہیں۔

ذرائع کے مطابق این ڈی ایم اے نے پاک فوج سے درخواست کی ہے وہ آگ بجھانے میں ان کی مدد کریں کیوں کہ پہاڑوں تک فائر بریگیڈ کی رسائی ممکن نہیں ہے۔

خیال رہے کہ ایک ہفتے کے دوران مارگلہ ہلز کے جنگل میں یہ دوسری بار آگ بھڑکی ہے، گزشتہ روز مزید دو مقامات پر آگی بھڑکی جن میں گاؤں صادق پور اور دامن کوہ پکنگ پوائنٹ شامل ہیں۔

سی ڈی اے کے نمائندے ملک سلیم کا کہنا تھا کہ ان کی ٹیم تمام کوششیں بروئے کار لا کر آگ کے شعلے بجھا رہی ہے، ایک بڑا علاقہ کلیئر کردیا گیا ہے تاہم پہاڑیوں کے اوپر تک فائر بریگیڈ کی رسائی ممکن نہیں ہے۔

کسٹم ہاؤس کراچی میں پراسرارآتش زدگی


ان کا کہنا تھا کہ اس موسم میں عام طور پر انسانی غلطی کی وجہ سے پہاڑیوں پر آگ بھڑک اٹھتی ہے۔ کہا گیا ہے کہ یہ شہری ایجنسی ہر سال مقامی دیہاتیوں کو سینکڑوں کی تعداد میں روزانہ کی تنخوا پر تین ماہ کے لیے آگ بجھانے پر مامور کرتی ہے۔

واضح رہے کہ رواں سال مارچ کے مہینے میں بھی مارگلہ پہاڑیوں پر آگ بے قابو ہوگئی تھی جسے بجھانے کے لیے ایئر فورس اور پاک فوج کی خدمات حاصل کرلی گئی تھیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانےکے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں