The news is by your side.

Advertisement

پہلی بار بلی کا کلون تیار

سنگاپور کی ایک کمپنی نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے پہلی بار مصنوعی طریقے سے ایک بلی تیار کرلی ہے، بلی کا یہ کلون 2 ماہ قبل تیار کیا گیا تھا۔

سنگا پور میں کام کرنے والی چینی بائیو ٹیک کمپنی کے سربراہ کا کہنا ہے کہ یہ کلون انہوں نے ایک 23 سالہ نوجوان کی درخواست پر تیار کیا ہے، نوجوان کی بلی 2 ماہ قبل مر گئی تھی اور اب اس کی نقل تیار کی گئی ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ یہ بلی مرنے والی بلی کی ہوبہو نقل ہے اور مکمل طور پر صحت مند ہے، کمپنی نے اس عمل کے لیے مرنے والی بلی کے جسم سے نمونے اور گوشت کی کچھ مقدار حاصل کی تھی۔

اس کمپنی کا دعویٰ ہے کہ وہ اس سے قبل 40 کتوں کے کلون بھی تیار کرچکی ہے۔ کمپنی کے مطابق کتے کے کلون پر 53 ہزار امریکی ڈالر یعنی تقریباً 83 لاکھ پاکستانی روپے اور بلی کے کلون پر 35 ہزار امریکی ڈالر یعنی 55 لاکھ پاکستانی روپے کے اخراجات آتے ہیں۔

خیال رہے کہ کلوننگ ایسا سائنسی طریقہ ہے جس کے تحت کسی بھی جاندار کے جسم سے نمونے، خلیات، خون اور گوشت وغیرہ لے کر اس کی مصنوعی طریقے سے تولید کی جاتی ہے۔

تولید کے بعد اس نمونے کی افزائش کی جاتی ہے، اس عمل میں جاندار کی تولید اور افزائش کے لیے سائنسی طریقے سے ایسا ماحول بنایا جاتا ہے جو کسی بھی جاندار کی پیدائش کے لیے درکار ہوتا ہے۔

کئی ممالک میں اب تک انسانی اعضا کی کلوننگ کا دعویٰ بھی کیا جاچکا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں