The news is by your side.

Advertisement

ڈوبنے والے ایک اور ماہی گیر کی لاش مل گئی، تین تاحال لاپتہ

کراچی : سندھ کے ضلع ٹھٹھہ میں کیٹی بندر کے قریب کھلے سمندر میں ڈوبنے والی لانچ کے ایک اور ماہی گیر کی لاش مل گئی، تین تاحال لاپتہ ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ٹھٹھہ کے کیٹی بندر کے سمندر میں کشتیاں ڈوبنے کا واقعہ میں اب تک 9 ماہی گیروں کی لاشیں نکالی جا چکی ہیں جبکہ 3افراد تاحال لاپتہ ہیں۔

ٹھٹھہ :پاک نیوی31 کریک بٹالین کی جانب سے8ویں دن آپریشن شروع کیا گیا، آپریشن میں بوٹس، شپ کے علاوہ جدیدآلات کا استعمال بھی کیا جارہا ہے

سات دن کے آپریشن میں 9 افراد کی لاشیں نکالی گئی ہیں، آپریشن ترشیئن کریک ،حجامڑو کریک اور سمندری جزیروں پر کیا جارہا ہے۔ ذرائع کے مطابق تین لاپتہ ماہی گیروں کاتعلق ضلع بدین سے ہے، پاک نیوی، پاک میرین، ریسکیواور مقامی غوطہ خور آپریشن میں مصروف ہیں،

ایدھی فاؤنڈیشن کے ترجمان کے مطابق آج صبح ملنے والی لاش کراچی کے ماہی گیر رفیق کی ہے۔ایدھی فاؤنڈیشن کی جانب سے ماہی گیر رفیق کی میت کو کراچی کے علاقے کورنگی میں اس کے گھر پہنچا دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ 22 جنوری کو تیز طوفانی ہواؤں کے باعث حجامڑو کریک اور کائر کریک کے مقام پر 3 کشتیاں اُلٹ گئی تھیں جس کے نتیجے میں 46 ماہی گیر لاپتہ ہو گئے تھے۔

مزید پڑھیں : طوفانی ہوائیں، کیٹی بندر کے قریب کشتی الٹ گئی، 8 ماہی گیر لاپتہ

ان 46 میں سے 34 ماہی گیروں کو بچا لیا گیا تھا جبکہ بقیہ 12 ماہی گیروں کی تلاش کے لیے آپریشن شروع کیا تھا جس کے نتیجے میں اب تک 9 ماہی گیروں کی لاشیں مل چکی ہیں اور 3 کی تلاش اب بھی جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں