The news is by your side.

Advertisement

بھارت نے دریائے چناب میں 70 ہزار کیوسک پانی چھوڑدیا

سیالکوٹ : بھارت نے دریائے چناب میں 70 ہزار کیوسک پانی چھوڑ دیا جس سے ہیڈ مرالہ ، خانکی اور قادر آباد بیراج کےمقام پر نچلے درجے کا سیلاب آگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان اور بھارت میں شدید بارشوں کے باعث ندی نالوں میں طغیانی کے سبب بھارتی کی جانب سے دریائے چناب میں 70 ہزار کیوسک پانی چھوڑ دیا گیا، جس کے بعد ہیڈمرالہ، خانکی اور قادرآباد بیراج پر نچلے درجے کا سیلاب آگیا۔

بیڈ مرالہ کے مقام پر پانی کا بہاؤ گزشتہ روز 73 ہزار کیوسک تھا جو آج 1 لاکھ 43 ہزار 900 کیوسک تک پہنچ گیا جس کے نتیجے میں آبی علاقے زیر آب آگئے اور فصلوں کو شدید نقصان پہنچا۔ پانی کے بہاؤ میں مسلسل اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے اگر یہی صورتحال رہی تو پنجاب کے دیگر علاقوں سیالکوٹ ، کوجرانوالہ، حافظ آباد ، چینوٹ اور جھنگ کے علاقوں میں سیلاب کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں :  ڈیرہ غازی خان اور راجن پور میں سیلاب کا خطرہ

دوسری جانب سیالکوٹ کے ایک نالے میں شگاف پڑنے سے اونچے درجے کا سیلاب آگیا ہے، بند ٹوٹنے سے سیلانی ریلہ شہری علاقوں میں داخل ہوگیا ہے ، جس کے باعث چٹی شیخاں کے مقام پر نالہ پلکھو میں بھی طغیانی آنے سے نیکا پورہ، پظام پورہ، پسرور روڈ، میانی گوپالپور، جودھے والی رائے پور، اور سیدنوالی کے متعدد دیہات زیر آب آگئے ہیں۔ سیلانی ریلے کا پانی متاثرین کے لیے بنائے جانے والے فلڈ کیمپ میں داخل ہوگیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : آئندہ مون سون میں بارشوں سے کراچی میں سیلاب کا خدشہ ہے، محکمہ موسمیات

متاثرہ علاقوں میں مقامی انتظامیہ کے ساتھ پاک فوج کے اہلکار بھی فلاحی کاموں میں مصروف ہیں اور نقل مکانی کرنے والے لوگوں کی مددکررہے ہیں۔

محکمہ موسمیات کی جانب سے بارشوں کا سلسلہ آئندہ دو روز تک جاری رہنے کی پیش گوئی کی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں