The news is by your side.

Advertisement

ملک میں آٹے کا مصنوعی بحران جلد ختم ہوجائے گا، خسرو بختیار کا دعویٰ

اسلام آباد : وفاقی وزیر فوڈ سیکیورٹی خسرو بختیار نے کہا ہے کہ ملک میں گندم کے وافر ذخائر موجود ہیں، آٹے کا مصنوعی بحران جلد ختم ہوجائے گا، آٹے کی فی کلو قیمت 60سے کم ہوکر 54روپے ہوگئی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سینیٹ اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کیا، وفاقی وزیر نے کہا کہ ساڑھے8 لاکھ ٹن گندم سال کے آخر میں بچ جائے گی، گزشتہ سال پاسکو نے20لاکھ ٹن گندم ریزرو رکھی ہے۔

ملک میں گندم کے وافر ذخائر ہیں،آٹے کا مصنوعی بحران جلد ختم ہوجائے گا، ملک میں اس وقت 40لاکھ ٹن گندم موجود ہے۔

خسرو بختیار نے کہا کہ سندھ حکومت نے گندم کا ایک دانہ بھی اسٹاک میں نہیں رکھا جبکہ پاسکو نے چار لاکھ ٹن گندم سندھ اور ساڑھے چار لاکھ ٹن کے پی کو جاری کی، سندھ کی سپلائی میں10ہزار ٹن تک سپلائی بڑھا دی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آٹا فی کلو 60روپے سے کم ہوکر 54روپے تک پہنچ چکا ہے، خیبر پختونخوا سے افغانستان میں گندم زیادہ جارہی تھی۔

وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ کے پی میں گندم 58روپے سے کم ہوکر 52روپے کلوہو گئی ہے، پاکستان میں چکی کا آٹا مجموعی استعمال کا صرف چار فیصد ہے۔

 

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں