The news is by your side.

Advertisement

‘ہاتھ اٹھایا یا آنکھ اٹھائی تو فروری کی طرح یاد رکھنا،تمہاری گیدڑ بھبکیوں میں نہیں آئیں گے،بھارت کو وارننگ

اسلام آباد : وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارت کو خبردار کیا ہے کہ آپ نے ہاتھ اٹھایا یا آنکھ اٹھائی تو فروری کی طرح یاد رکھنا، ہم تمہاری گیدڑ بھبکیوں میں نہیں آئیں گے۔

تفصیلات کے مطابقنے سینیٹ میں پالیسی بیان میں کہا ہے کہ بھارت نےکشمیرمیں عالمی قوانین کی خلاف ورزی ورزی کی، کشمیرآج بھی اقوام متحدہ کے ایجنڈے پر متنازع مسئلہ ہے، بھارت پاکستان کےخلاف جھوٹا فلیگ آپریشن کرسکتا ہے لیکن ہم مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی مظالم بے نقاب کرتےرہیں گے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ بھارت اورچین میں50سال بعدسرحدی جھڑپیں ہوئیں جبکہ بھارت کے نیپال،سری لنکا اور بھوٹان سے بھی تنازعات ہیں، سلامتی کونسل انتخابات میں ایشیاپیسفک گروپ کی مشاورت ہوتی ہے، مشاہدحسین سید نے کہا پاکستان نےبھارت کوغیرمستقل رکنیت کاراستہ دیا، بھارت 2013سے سلامتی کونسل کی رکنیت کی کوشش کررہے ہیں، واک اوورہم نےنہیں دیا کوئی دے رہا ہوگا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ غیرمستقل رکن بننےکیلئےکئی سال کی مہم درکارہوتی ہے، پاکستان2025-26 کیلئے سلامتی کونسل کی رکنیت کا خواہشمند ہے، اس کیلئےہمیں آج سے کمپین کرنے کی ضرورت ہے، بھارت نےجب خواہش ظاہرکی تو ایشیا پیسیفک گروپ میں صرف وہ امیدوارتھا، بھارت 9سال سے اس کیلئے کمپین کررہا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان چاہتا تو بھارت کے مقابلے میں الیکشن لڑتالیکن حاصل کچھ نہ ہوتا، اس سےہماری2025-26 کی کمپین بھی متاثرہوتی، ہمارا کام بھارت کو ایکسپوز کرنا ہے وہ ہم کریں گے۔

وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ چین نےبھی بھارت کے5اگست کےاقدام کومسترد کر دیا، چین کی سوچ کیا ہے میں جانتا ہوں، آج بھارت تنہا ہو رہا ہے، نیپال، بھوٹان اورسری لنکابھی بھارت کےخلاف ہیں، افغانستان بھی سوچ رہاہےامن وامان میں رخنابھارت ڈال رہاہے۔

شاہ محمود قریشی نے بھارت کو خبردار کیا آپ نے ہاتھ اٹھایا یاآنکھ اٹھائی تو فروری کی طرح یاد رکھنا، یقیناًبھارت بڑا ملک اورمعیشت ہے، لیکن ہم تمہاری گیدڑ بھبکیوں میں نہیں آئیں گے۔

انھوں نے کہا کہ افراد، معاشرے، قومیں معاشی دباؤ کی وجہ سے شدید متاثر ہو رہے ہیں، عالمی چیلنج سے نبردآزما ہونے کیلئے یکجہتی ،کثیر الجہتی تعاون کی ضرورت ہے، ہمیں کورونا سے نمٹنے کے لئے چین کی کاوشوں کو سراہنا ہوگا، چین نے بڑے پیمانے پر کورونا ٹیسٹنگ،لاک ڈاؤن، حفاظتی تدابیر سے قابو پایا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں