عمران پومپیو تنازع: پاکستان کا معاملہ ختم کرنے کا فیصلہ -
The news is by your side.

Advertisement

عمران پومپیو تنازع: پاکستان کا معاملہ ختم کرنے کا فیصلہ

مقبوضہ کشمیر سے متعلق دستاویزی فلم پر بھارت نے چینل کی نشریات بند کردیں: دفتر خارجہ

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ الجزیرہ ٹی وی نے مقبوضہ کشمیر سے متعلق دستاویزی فلم نشر کی تھی جس کے بعد بھارت نے کشمیر میں الجزیرہ ٹی وی کی نشریات بند کردیں۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے ہفتہ وار بریفنگ کے دوران بتایا کہ وزیر اعظم نے دہشت گردی کا شکار افراد کے عالمی دن پر پیغام جاری کیا، انہوں نے دہشت گردی کا شکار افراد سے اظہار یکجہتی کیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں جاری ہیں۔ گزشتہ ہفتے بھارتی افواج نے 10 بے گناہ کشمیریوں کو شہید کیا، بھارتی افواج کی جانب سے پیلٹ گنز کے استعمال اور حریت رہنماؤں کی غیر قانونی نظر بندی کی مذمت کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حریت رہنماؤں کی بگڑتی صحت کی صورتحال پر بھی تشویش ہے۔ عالمی برادی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کا نوٹس لے۔ بھارت کی جانب سے کشمیر میں الجزیرہ ٹی وی کی نشریات بند کی گئیں، الجزیرہ ٹی وی نے مقبوضہ کشمیر سے متعلق دستاویزی فلم نشر کی تھی۔ ایل او سی پر بھارتی اشتعال انگیزی پر بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو طلب بھی کیا۔

 انہوں نے کہا کہ امریکی وزیر خارجہ کی کال کے معاملے کو ہم ختم کرنا چاہتے ہیں۔معاملے کو آگے نہیں بڑھانا چاہتے، مزید بات نہیں کریں گے۔

ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ گستاخانہ خاکوں کے معاملے پر پاکستان نے ہالینڈ کے ناظم الامور کو طلب کر کے شدید احتجاج کیا۔ پاکستان نے او آئی سی


مزید پڑھیں: پاکستان نے مائیک پومپیو اور وزیراعظم کی گفتگو سے متعلق امریکی بیان مسترد کردیا


کو خط بھی لکھا، ڈچ سفیر کو ملک بدر کرنے یا کوئی اور ایکشن لینے کا فیصلہ نہیں ہوا۔

چینی وزیر خارجہ کا دورہ جلد ہوگا جس کی تفصیلات دی جائیں گی۔ ایرانی وزیر خارجہ کا پاکستان آنا بہت مثبت ہے، غزنی حملہ سے متعلق افغانستان کے بیانات محض الزامات ہیں۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ پاک بھارت تعلقات میں فاصلہ ہے کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، کرتار پور راستے کو کھولنا ایک قدم ہوسکتا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ روس میں ایس سی او کے زیر اہتمام مشترکہ جنگی مشقیں جاری ہیں، مشق میں پاکستان اور بھارت کے فوجی بھی شریک ہیں۔ ’پاکستان ایس سی او کا ایکٹو ممبر ہے لہٰذا پاکستان اس میں شریک ہے‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں