The news is by your side.

Advertisement

شمالی وزیرستان حملہ : شہیدکیپٹن عارف اللہ مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ سپردخاک

لکی مروت: شمالی وزیرستان میں پاک فوج پر  دہشت حملے میں شہید کیپٹن عارف اللہ کو مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ آبائی گاؤں سپردخاک کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق شمالی وزیرستان حملے میں شہید کیپٹن عارف اللہ کی نمازجنازہ لکی مروت میں آبائی گاؤں تاجہ ادا کی گئی، نمازجنازہ جی اوسی پشاور میجر جنرل اسد نوازسمیت سینئرفوجی افسران نےشرکت کی جبکہ علاقہ مکینوں کی بڑی تعداد بھی نمازجنازہ میں موجود تھی۔

بعد ازاں شہید کیپٹن عارف اللہ کو مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ سپردخاک کردیا گیا، تاجہ زئی میں شہیدکی قبرپرپھول چڑھائےگئے اور قومی پرچم لہرایا گیا۔

شہید کیپٹن عارف کےپسماندگان میں والدین، 3 بھائی اور 4 بہنیں شامل ہیں۔

دوسری جانب پاک فوج کے شہیدظہیرعباس کی نمازجنازہ شام4بجے بلکسر میں اداکی جائے گی ، شہیدظہیر عباس نے سوگواران میں بیوہ اور ایک سال کی بیٹی چھوڑی ہے۔

شہید ظہیرعباس کے والد اور چچا نے اے آروائی نیوزسےبات چیت کرتے ہوئے کہا شہیدظہیرعباس نے 3 ماہ بعد ریٹائرڈ ہونا تھا۔

یاد رہے گذشتہ روز شمالی وزیرستان کے علاقے خرکمر میں بارودی سرنگ کا دھماکا کیا گیا، جس میں پاک فوج کے تین افسروں سمیت ایک جوان نے جام شہادت نوش کیا جبکہ چار جوان زخمی ہوئے۔

مزید پڑھیں : شمالی وزیرستان : بارودی سرنگ کا دھماکہ، پاک فوج کے تین افسر اور جوان شہید چار زخمی

شمالی وزیرستان دھماکے میں شہید ہونے والوں میں لیفٹیننٹ کرنل راشد کریم بیگ کا تعلق ہنزہ ، شہید میجر مقصود بیگ کا تعلق کراچی اور شہید کیپٹن عارف اللہ کا تعلق لکی مروت سے ہے جبکہ افسوسناک واقعے میں شہید لانس حوالدار ظہیر کا تعلق ضلع چکوال سے ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں نے سڑک کنارے بارودی سرنگ سے فوجی گاڑی کو نشانہ بنایا، حملہ اس علاقے میں کیا گیا جہاں دہشت گردوں کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں۔

خیال رہے شمالی وزیرستان میں دہشت گردی کے خاتمے کے لیے کی جانے والی کارروائیوں کے دوران ایک ماہ میں دس سیکیورٹی اہلکار شہید اور پینتیس زخمی ہو چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں